سٹیٹ بنک سے قرض لینا بند،حکومت نے کم ریٹ پر طویل مدتی بانڈ جاری کردیئے

 سٹیٹ بنک سے قرض لینا بند،حکومت نے کم ریٹ پر طویل مدتی بانڈ جاری کردیئے

  

  اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزارت خزانہ حکام نے کہا ہے کہ حکومت نے کم ریٹ پر طویل مدتی بانڈ جاری کردیئے ہیں، مقامی بانڈز کی مدت 3 سے 20 سال ہے۔ اسلام آباد میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزارت خزانہ حکام نے کہا کہ اس بار 140 ارب روپے کے بجائے صرف 38 ارب روپے کے بانڈز جاری کئے گئے ہیں جبکہ مقامی بانڈز کی مدت 3 سے 20 سال ہے۔16.1 ارب روپے کے تین سالہ بانڈ پر 8.19 فیصد سود دیا گیا ہے، جبکہ 12 ارب کے 15 سالہ بانڈ پر سود کی شرح 9.91 فیصد، 10 ارب کے 20 سالہ بانڈ پر 10.42 فیصد اور ساڑھے 5 کروڑ کے 10 سالہ بانڈ پر 8.94 فیصد شرح سود ہوگا۔وزارت خزانہ حکام کے مطابق ماضی کی حکومتوں نے پالیسی ریٹ سے ساڑھے 4 فیصد زیادہ ریٹ پر قرضہ لیا، جبکہ ماضی میں بینکوں کو زیادہ فائدہ پہنچایا گیا۔ 2011 کے بعد پہلی بار 15 سال کا بانڈ جاری کیا گیا اور سال 2017 کے بعد 20 سال کی مدت کا بانڈ جاری یا گیا ہے۔ وزارت خزانہ میں پروفیشنل ڈیٹ مینجمنٹ ونگ قائم کر دیا گیا ہے۔ حکومت ہر ماہ 140 ارب کے مقامی بانڈز جاری کرے گی اوربانڈز ضرورت کے مطابق کم سے کم شرح سود پر اٹھائے جائیں گے، جبکہ اسٹیٹ بینک سے قرضوں کے حصول کا سلسلہ بند کر دیاہے جس سے نئے نوٹ چھاپنے کی شرح کم ہوئی ہے۔

بانڈ جاری 

مزید :

صفحہ اول -