یورپ کا وہ گاﺅں جہاں آپ سیر کے لیے جائیں تو مفت قیام کرسکتے ہیں  لوگوں کی قطاریں لگ گئیں

یورپ کا وہ گاﺅں جہاں آپ سیر کے لیے جائیں تو مفت قیام کرسکتے ہیں  لوگوں کی ...
یورپ کا وہ گاﺅں جہاں آپ سیر کے لیے جائیں تو مفت قیام کرسکتے ہیں  لوگوں کی قطاریں لگ گئیں

  

روم(مانیٹرنگ ڈیسک) سیاحت کی غرض سے بیرون ملک جائیں تو زیادہ تر خرچ تو رہائش کے انتظام پر ہی اٹھ جاتا ہے تاہم اب اٹلی کے ایک قصبے نے سیاحوں کے لیے مفت قیام کا اعلان کر دیا ہے جس سے اس گاﺅں کی سیاحت کے خواہشمندوں کا تانتا بندھ گیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق اٹلی کے اس قصبے کا نام سین جیووینی گیلڈو ہے جس کے حکام نے رواں سال جون کے اختتام سے ہی سیاحوں کو مفت قیام کی سہولت دینے کا اعلان کر رکھا ہے۔ جس سے اب یہاں ماہانہ سینکڑوں سیاح پہنچ رہے ہیں اور 8ہزار لوگوں کی درخواستیں موصول ہو چکی ہیں جو قصبے میں آنا چاہتے ہیں۔

سیاحوں کے لیے مفت قیام کی مہم کے سربراہ سٹیفانو ٹروٹا کا کہنا تھا کہ ”ہمیں 70درخواستیں صرف ایک ملک قازقستان سے موصول ہوئی ہیں۔ اس کے علاوہ باقی بے شمار ممالک سے بھی لوگوں نے درخواستیں دی ہیں۔“ رپورٹ کے مطابق یہ گاﺅں نیپلز سے شمال مشرق میں 90میل کے فاصلے پر واقع ہے اور ایک پرفضاءسیاحتی مقام ہے۔ اس آفر کے تحت انتظامیہ نے سیاحوں کو ایک ہفتے کے لیے مفت قیام دینے کا اعلان کیا ہے تاکہ قصبے میں سیاحت کو فروغ دیا جا سکے جو کورونا وائرس کی وجہ سے لگ بھگ ختم ہو چکی ہے۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -