پسند کی شادی کرنے والی لڑکی سے زیادتی کے ملزم جج نے آخر کار اپنا ڈی این اے ٹیسٹ کراہی لیا، رزلٹ کب آئے گا؟

پسند کی شادی کرنے والی لڑکی سے زیادتی کے ملزم جج نے آخر کار اپنا ڈی این اے ...
پسند کی شادی کرنے والی لڑکی سے زیادتی کے ملزم جج نے آخر کار اپنا ڈی این اے ٹیسٹ کراہی لیا، رزلٹ کب آئے گا؟

  

سیہون (ڈیلی پاکستان آن لائن) سلمیٰ بروہی زیادتی کیس کے ملزم جج امتیاز بھٹو نے 7 ماہ بعد اپنا ڈی این اے ٹیسٹ کرالیا۔

ملزم سول جج امتیاز بھٹو کا ڈی این اے ٹیسٹ لیاقت یونیورسٹی جامشورو میں کیا گیا۔ ملزم کا ڈی این اے فرسٹ سول جج ایاز قریشی کی نگرانی میں انکوائری افسر مسعود اقبال کی موجودگی میں کرایاگیا۔ ڈاکٹر حسین سومرو نے ملزم جج کے خون کے نمونے اور گال کے سوئیپ حاصل کیے۔ لیاقت یونیورسٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈی این اے ٹیسٹ کی رپورٹ آنے میں ایک مہینہ لگ سکتا ہے۔

خیال رہے کہ 7 ماہ قبل سیہون شریف سے سلمیٰ بروہی نے سول جج امتیاز بھٹو پر زیادتی کا الزام لگایا تھا۔ سلمیٰ بروہی نے نثار بروہی سے پسند کی شادی کی تھی لیکن ان کے گھر والوں نے انہیں پکڑ لیا جس کے بعد معاملہ پولیس تک پہنچا۔ پولیس جب لڑکی کو بیان ریکارڈ کرانے کیلئے سول جج امتیاز بھٹو کے پاس لے کر گئی تو اس نے عملے کو باہر نکال دیا اور خوفزہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔ بعد ازاں طبی معائنے میں لڑکی سے زیادتی کی تصدیق ہوگئی تھی۔ عدالت نے حکم دیا تھا کہ سول جج کا ڈی این اے ٹیسٹ کرایا جائے جو 7 ماہ بعد ہوا ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -سندھ -لاڑکانہ -