لاہور ہائیکورٹ، فلم سنسر بورڈ کو سمگل شدہ بھارتی فلموں کو سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے روک دیا

لاہور ہائیکورٹ، فلم سنسر بورڈ کو سمگل شدہ بھارتی فلموں کو سرٹیفکیٹ جاری کرنے ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس خالد محمود خان نے فلم سنسر بورڈ کو سمگل شدہ بھارتی فلموں کو سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے روک دیا ہے۔فاضل جج نے کیس پر سماعت دو ہفتوں تک ملتوی کرتے ہوئے سنسر بورڈ کو جواب داخل کرنے کی ہدایت کی ہے۔عدالت نے یہ حکم بھارتی فلموں کی نمائش پر پابندی کے لیے دائر درخواست پر جاری کیا۔پاکستانی فلم پروڈیوسرز،ڈائریکٹرز کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیاہے کہ سینماﺅں میں سمگل شدہ بھارتی فلمیں نمائش کے لئے پیش کی جا رہی ہیں جس سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے خسارے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی فلموں کی نمائش سے پاکستانی فلم انڈسڑی بری طرح تباہی کی طرف جا رہی ہے جبکہ ان فلموں سے بھارتی کلچر فروغ پا رہا ہے لہذا عدالت فلم سنسر بورڈ کو غیر قانونی بھارتی فلموںکو سرٹیفیکیٹ جاری کرنے سے روکے۔جس پر عدالت نے سرٹیفکیٹ جاری کرنے سے روکتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔

مزید :

صفحہ آخر -