2013 ءپاکستان ہاکی کیلئے بدترےن سال رہا

2013 ءپاکستان ہاکی کیلئے بدترےن سال رہا

  

لاہور(آئی اےن پی)رواں سال پاکستان ہاکی کیلئے انتہائی شرمناک رہا،بدترین کارکردگی کی وجہ سے پہلی بار پاکستان ورلڈ کپ سے باہر ہوگیا،صرف ایشین چیمپیئنز ٹرافی کے ٹائٹل کا دفاع کیا جبکہ پی ایچ ایف کی نئی مینجمینٹ کو مالی مسائل کا سامنا ہے۔قومی ہاکی ٹیم دو ہزار تیرہ مارچ میں اذلان شاہ کپ میں چھٹے نمبر پر رہی،ملائیشیا میں ہی ورلڈکپ کیکوالیفائنگ راونڈ ورلڈ ہاکی لیگ میں ساتویں پوزیشن حاصل کی اور پھر ایشیا کپ میں تیسرے نمبر پر ہونے سے ورلڈ کپ کھیلنے کا آخری موقع بھی گنواکر میگا ایونٹ سے باہر ہوگئے۔آسٹریلیا میں نائن اے سائیڈ ٹورنامنٹ میں چوتھی جبکہ جاپان میں ہونیوالی ایشین چیمپیئنز ٹرافی میں اپنے اعزاز کا دفاع کیا۔جوئیر ہاکی ٹیم نے دورہ یورپ میں آٹھ میچز میں سے چار جیتے اور چار ہارے۔سلطان جوہر کپ میں چوتھے نمبر پر رہے جبکہ دہلی میں ہونیوالے ورلڈ کپ میں بھارت کو ہرا کر نویں پوزیشن حاصل کی،پاکستان نے بوائز انڈر سکسٹین ایشیا کپ اپنے نام کیا،ویمن ہاکی ٹیم بھی کوئی خاطر خواہ نتائج نہ دکھا سکی۔

آصف باجوہ مستعفی جبکہ انتخابی عمل کے ذریعے اگلے چار سال کی مدت کیلئے اختر رسول صدر اور رانا مجاہد سیکرٹری بن گئے۔جنہیں فیڈریشن کا خزانہ خالی ہونے کی وجہ سے مالی مسائل کا سامنا ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -