ترکی میں قتل ہونیوالے روسی سفیر آندرے کارلوف کا جسد خاکی روس روانہ

ترکی میں قتل ہونیوالے روسی سفیر آندرے کارلوف کا جسد خاکی روس روانہ
ترکی میں قتل ہونیوالے روسی سفیر آندرے کارلوف کا جسد خاکی روس روانہ

  

انقرہ (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ترک دارالحکومت انقرہ میں قتل ہونے والے روسی سفیر کا جسد خاکی روس روانہ کر دیاگیا ۔

بی بی سی کے مطابق پیر کے روز انقرہ میں تقریب کے دوران خطاب کرتے ہوئے قتل ہونے والے روسی سفیر آندرے کارلوف کی لاش روس کیلئے روانہ کر دی گئی ہے ۔ آندرے کارلوف کے تابوت کو روسی پرچم میں لپیٹ کر ماسکو سے خصوصی طیارے پر روس بھیجا گیا ۔اس موقع پر ترکی کے نائب وزیراعظم تغرل ترکیس اور سفارتکار بھی موجود تھے۔ آندرے کارلوف کے قتل کی تحقیقات کیلئے روسی تفتیش کار ترکی بھیج دیے گئے ہیں۔

روسی سفارتکار پیٹر پولشیکوف کی گھر سے لاش برآمد

آندرے کارلوف کو مارنے والا 22 سالہ حملہ آور مولود مرت التنتاش انقرہ پولیس کا اہلکار تھا اور بظاہر وہ شام کے شہر حلب میں روسی مداخلت کے خلاف احتجاج کر رہا تھاجسے بعد میں فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا تھا ۔62 سالہ آندرے کارلوف ایک منجھے ہوئے سفارتکار تھے جنہوں نے 1980ءکی دہائی کا بیشتر حصہ شمالی کوریا میں بطور روسی سفیر گزارا۔1991ءمیں سویت یونین کے ٹوٹنے کے بعد انہیں جنوبی کوریا منتقل کر دیا گیا تھا اور 2001ءمیں وہ واپس شمالی کوریا میں بطور سفیر گئے۔

اندرے کارلوف جولائی 2013ءمیں ترکی میں روسی سفیر تعینات کیے گئے۔ ان کے دور میں روس اور ترکی کے درمیان تعلقات میں کشیدگی آئی اور گذشتہ سال شامی سرحد کے قریب ایک ترک طیارے نے روسی جنگی جہاز ما گرایا تھا۔

ترکی کے دارالحکومت انقرہ میں روس کے سفیر پر حملہ ایک ایسے وقت کیا گیا ہے جب گزشتہ کئی دنوں سے شام میں روسی فوج کی کارروائیوں کے خلاف ترکی میں مظاہرے کیا جا رہے تھے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں