پہلے کنواری ظاہر کرکے شادی کی پھر سامان لے کر فرار ہوگئی ،شہری بیوی اور ساس کے خلاف مقدمہ کے اندراج کے لئے سیشن کورٹ پہنچ گیا

پہلے کنواری ظاہر کرکے شادی کی پھر سامان لے کر فرار ہوگئی ،شہری بیوی اور ساس ...
پہلے کنواری ظاہر کرکے شادی کی پھر سامان لے کر فرار ہوگئی ،شہری بیوی اور ساس کے خلاف مقدمہ کے اندراج کے لئے سیشن کورٹ پہنچ گیا

  

لاہور(نامہ نگار)چاربچوں کی ماں نے کنواری ظاہر کرکے محنت کش محمد خالد کو پہلے اپنے جال میں پھنسا یا،پھرشادی کے بعد شادی شدہ ہونے کا علم ہونے پر خاتون زاہدہ بی بی گھر سے سامان لے کر فرار ہو گئی ہے،شوہر محمد خالد نے اپنی بیوی کے خلاف سیشن کورٹ میں اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کردی ۔ایڈیشنل سیشن جج عبدالغفار کی عدالت میں نشترکالونی کے رہائشی محنت کش محمد خالد نے بیوی زاہدہ پروین اور نکاح خواں نذر محمد کے خلاف اندراج مقدمے کی درخواست دائر کی۔عدالت میں درخواست گزار کے وکیل نے اندراج مقدمے کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ محمد خالد نے زاہد نامی خاتون سے شادی کی شادی سے پہلے زاہدہ بی بی کے بارے میں بتایا جاتا رہا کہ وہ کنواری ہے اور غریب گھرانے سے تعلق ہے اس پر ترس کھا کر محمد خالد نے زاہدہ بی بی سے شادی کرلی۔ شادی کے بعد جب زاہدہ سسرال آئی تو علم ہوا کہ زاہدہ تو چار بچوں کی ماں ہے پہلے خاوند سے اس نے طلاق لے رکھی ہے ،خالد نے زاہدہ سے پوچھا تو اس نے بتایا کہ وہ واقع شادی شدہ ہے لیکن راز فاش ہونے پر اور سسرال کے ڈر سے وہ گھر سے رات کو نقدی اور زیورات لے کر فرار ہوگئی عدالت کو بتایا گیا کہ نکاح خوان بھی اس کیس میں برابر کا شریک ہے جس نے شادی شدہ ہونے کا چھپایا۔فاضل جج نے تھانہ نشترکالونی پولیس سے آج 22دسمبر کو رپورٹ طلب کرلی ہے ۔

مزید : لاہور