کراچی تاجر الائنس نے نقب زنوں سے تحفظ کا مطالبہ کردیا

کراچی تاجر الائنس نے نقب زنوں سے تحفظ کا مطالبہ کردیا

  

کراچی (این این آئی)کراچی تاجرالائنس ایسوسی ایشن کے چیئرمین ایاز میمن موتی والا کی زیر قیادت کراچی کے عہدیداران کا اجلاس ہوا ،اس موقع پر کراچی میں تالاتوڑ گروپ کی کارروائیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ایاز میمن موتی والا کا کہنا تھا کہ شہر قائد میں کاروباری علاقوں میں ڈکیتی ،چوری اور نقب زنی کی وارداتوں سے تاجربرادری کے لوگوں میں شدید خوف و ہراس پایا جاتاہے ،اجلاس میں موجود سینئروائس چیئرمین ۔حمیدالدین جنرل سیکرٹری، معراج احمدخان، سہل افضل لیگل ایڈوائزر،عامرضیاء اورضلعی صدور میں معراج محمد قریشی ،حاجی محمداسماعیل اور سید اخترحسین سمیت دیگر نے بھی اپنے اپنے خیالات کااظہار کیا ۔ ایاز میمن موتی والا کا کہنا تھا کہ پولیس شہر کے بڑے بازاروں میں نقب زنوں پر قابوپانے میں سست روئی کا شکار نظر آتی ہے کیونکہ اس قسم کے واقعات کا رکنے کی بجائے کچھ د ن کے بعد پھر سے شروع ہوجانا تشویش کا باعث ہے ،ماضی میں جس انداز میں تاجروں کو ہراساں کرکے بھتہ وصولیوں کا جو کاروبار تھا وہ تقریباً اب بند ہوچکاہے جس کا سہرا رینجرز اور سیکورٹی اداروں کے سر جاتا ہے مگر افسوس ابھی بھی اس شہر میں کچھ شر پسند عناصر لوگ موجود ہیں جنھوں نے چھوٹے تاجروں کا جینا حرام کررکھاہے

،انہوں نے کہاکہ تاجر برادری کی دکانوں کی حفاظت کے لیے انتظامیہ کی جانب سے مظبوط اور ٹھوس انتظامات کئے بغیر اس قسم کی وارداتوں سے بچنا ممکن نہیں ہے،آئے روز تاجربرادری بیش قیمتی اشیاء اور رقوم سے لٹ رہی ہے ،مسلسل اس قسم کی وارداتو ں کے بعد یہ کہنا مناسب ہوگا کہ پولیس عوام کا تحفظ کرنے میں ناکام ہوچکی ہے ، انہوں نے کہاکہ موجووہ اور ماضی کی حکومتوں نے تاجروں کے مسائل کو ہمیشہ سے نظرانداز کیا ہے یہ سب جانتے ہوئے کہ ہم ملکی معیشت میں ریڈھ کی ہڈی کا کردار رکھتے ہیں ،انہوں مزید کہاکہ تاجر الائنس اپنے کاروباری بھائیوں کو جرائم پیشہ افراد کے رحم وکرم پر نہیں چھوڑ سکتی ،ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ فوری طور پر تجارتی حلقوں میں سیکورٹی کے ٹھوس اقدامت کو یقینی بنائیں تاکہ آئندہ اس قسم کے واقعات سے بچا جاسکے ۔

مزید :

کامرس -