ماں کا دودھ صحت کا ضامن ، ہسپتالوں میں آگاہی مہم چلانے کی ہدایت

ماں کا دودھ صحت کا ضامن ، ہسپتالوں میں آگاہی مہم چلانے کی ہدایت

  

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ خواجہ عمران نذیر نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ بچوں کی صحت کے تحفظ کے لئے بریسٹ فیڈنگ کو مقبول بنانے اور اس حوالے سے خواتین میں آگاہی پیدا کرنے کے لئے بھرپور اقدامات کئے جائیں۔ وزیر صحت نے ہدایت کی کہ محکمہ خوراک بچوں کے لئے فارمولا ملک کے ڈبوں پر بریسٹ فیڈنگ کی افادیت کے حوالے سے پیغام شائع کرنے کو یقینی بنائے تاکہ عوام کو آگاہی حاصل ہو۔انہوں نے کہا کہ پنجاب بریسٹ فیڈنگ ایکٹ کے تحت متعلقہ کمپنیاں ایسا کرنے کی پابند ہیں۔خواجہ عمران نذیر نے ان خیالات کا اظہار بریسٹ فیڈنگ بورڈ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔اجلاس میں انٹرنیشنل سیکرٹری ٹیکنیکل ڈاکٹر عاصم الطاف، ڈائریکٹر مدراینڈ چائلڈ ہیلتھ پروگرام ڈاکٹرمختار حسین سید، فوکل پرسن عاصمہ مسعود اور بورڈ کے دیگر ممبران نے شرکت کی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ حکومت نے چیف ایگزیکٹو آفیسرز ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹیز ، ہسپتالوں کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹس ، ایڈیشنل میڈیکل سپرنٹنڈنٹس اور سکول نیوٹریشن سپروائزر کو انسپکٹر کا درجہ دے کر صوبہ بھر میں 350انسپکٹر مقرر کردیئے ہیں جو ہسپتالوں میں نومولود بچوں کو ان کی ماؤں کا دودھ پلانے کے انتظامات اور سہولیات کو مانیٹر کریں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ ہسپتال انتظامیہ بریسٹ فیڈنگ کی حوصلہ افزائی کرکے بچوں کے لئے ڈبے کے دودھ کے استعمال کو کم سے کم کیا جائے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ماں کا دودھ بچوں کے لئے ایک مکمل اور صحت مند غذا ہے جس کا نعیم البدل ڈبے کا دودھ نہیں ہوسکتا۔ خواجہ عمران نذیر نے ہدایت کی کہ لیبر ڈیپارٹمنٹ صنعتوں اور کارخانوں میں کام کرنے والی ایسی خواتین جن کے چھوٹے بچے ہیں ان کے لئے بریسٹ فیڈنگ کارنرز بنوائیں اور انہیں سہولیات فراہم کرنے میں تعاون کریں۔

عمران نذیر

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -