نواز شریف عدلیہ مخالف تحریک کا تصور بھی نہیں کر سکتے ،سعد رفیق

نواز شریف عدلیہ مخالف تحریک کا تصور بھی نہیں کر سکتے ،سعد رفیق

  

لاہور(این این آئی) وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ آزاد عدلیہ تحریک کی قیادت کرنے والے نواز شریف عدلیہ کے خلاف تحریک چلانے کا تصور بھی نہیں کر سکتے، مخالفین حقائق کو مسخ نہیں کر سکتے ،ڈنڈے اور دھرنے کے زور پر استعفے ملک کو جنگل بنا دیں گے ،اقتدار سے نکالنے کا قانونی ،جمہوری اور آئنی طریقہ اپنایا جائے ۔ انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا کہ حکومت کو بحرانوں سے دوچار رکھنے کے خواہشمند درحقیقت ریاست کے لئے بحران پیدا کر رہے ہیں ، ریاستی اداروں اور منتخب حکومت کے مابین غلط فہمیاں اور اختلافات پیدا کروانے کی کوششیں قابل مذمت ہیں ،ڈنڈے اور دھرنے کے زور پر استعفے ملک کو جنگل بنا دیں گے،اقتدار سے نکالنے کا قانونی ،جمہوری اور آئنی طریقہ اپنایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ جناب طاہر القادری کو عدلیہ پر اعتماد ہے تو اپنا مقدمہ دھرنوں کی بجائے عدالت میں کیوں نہیں لڑتے ؟،ان کی تند مزاجی اور جارحانہ رویہ حالات بگاڑتا ہے ،عدل کا مطالبہ ہر ایک کا بنیادی حق ہے ،اپنے حقوق کے حصول کے لیے دوسروں کے حقوق غصب کرنے کا چلن قبول نہیں ۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ عدالتوں میں پیش ہی نہ ہونے والے کی آزادی کے علمبردار کیسے بن سکتے ہیں؟۔مسلم لیگ (ن) عدلیہ کی آزادی اور وقار کی سب سے بڑی داعی ہے ،ہم نے عدلیہ کی آزادی اور بحالی کی تاریخی جدوجہد کی۔آزاد عدلیہ تحریک کی قیادت کرنے والے نواز شریف عدلیہ کے خلاف تحریک چلانے کا تصور بھی نہیں کر سکتے،مخالفین حقائق کو مسخ نہیں کر سکتے ۔

سعد رفیق

مزید :

صفحہ اول -