الیکشن کمیشن کو پی ٹی آئی حسابات کی از خود جانچ پڑتال کا اختیار ہے ٗ اکبر ایس بابر

الیکشن کمیشن کو پی ٹی آئی حسابات کی از خود جانچ پڑتال کا اختیار ہے ٗ اکبر ایس ...

  

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے بانی اکبر ایس بابر نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کو پی ٹی آئی کے حسابات کی از خود جانچ پڑتال یا پھر کسی تیسرے فریق کی شکایت پر کارروائی کا مکمل اختیار ہے ۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں اس اختیار کی توثیق کی گئی کہ الیکشن کمیشن سیاسی جماعتوں کی قیادت کو بد انتظامی اور دیگر نوعیت کی بدعنوانیوں کے ارتکاب کی صورت میں گرفت میں لا سکتا ہے، عدالت عظمیٰ کے فیصلے نے تحریک انصاف کے تمام دلائل ردی کی ٹوکری میں پھینک دیئے ہیں، یہ وہ حقائق ہیں جن سے تحریک انصاف اور اس کی قیادت کئی برس سے نظریں چراتی اور انکار کرتی آرہی ہے۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کا خلاصہ یہ ہے کہ پی ٹی آئی نے فارن فنڈنگ کیس میں اب تک جو موقف اپنایا اور جن دلائل پر تکیہ کیا وہ تمام غلط ہیں۔ 8مارچ 2017 کو الیکشن کمیشن نے اپنے فیصلہ میں پہلے طے کر دیا ہے اکبر ایس بابر بدستور تحریک انصاف کے رکن اور اپنے عہدے پر بحال ہیں عدالت عظمیٰ کے فیصلے سے انصاف کے حصول کی راہ میں تحریک انصاف قانونی موشگافیوں اور مختلف روایتی حیلے بہانوں سے جو رکاوٹیں پیدا کرتی آئی ہے، وہ بھی دور ہو گئی ہیں جس کے بعد کارروائی آگے بڑھے گی اور انصاف کے تقاضے پورے ہوسکیں گے۔سپریم کورٹ کے فیصلے کے صفحہ نمبر 57،پیرا45میں پی ٹی آئی کی جانب سے پارٹی کے بینک سٹیٹ منٹس اور دیگر مالیاتی معلومات کی فراہمی سے انکار کے بارے میں قرار دیا گیا کہ الیکشن کمیشن کا یہ اختیار ایک لازمی تقاضا ہے کہ وہ حقائق ،معلومات اور ڈیٹا حاصل کرے تا کہ ایسے مقدمہ میں اپنی قانونی ذمہ داریاں احسن اور موثر انداز میں انجام دے سکے، یہ اختیار الیکشن کمیشن کو آئین اور قانون نے دیا ہے۔ عدالتی فیصلہ کے صفحہ نمبر 59کے پیرا 45کے مطابق الیکشن کمیشن درکار معلومات طلب کرنے اور حقائق جمع کرنے میں با اختیار ہے جس سے اسے فیصلہ کرنے اور اس امر کے تعین میں مدد مل سکے کہ آیا کسی سیاسی جماعت کے وصول کردہ عطیات آرٹیکل چھ(تین) کے تحت ممنوع زمرے میں تو نہیں آتے۔

اکبر ایس بابر

مزید :

صفحہ آخر -