درخواست گزار کو قانون کے مطابق سب انسپکٹر کے عہدے پر بھرتی کرنے کاحکم

درخواست گزار کو قانون کے مطابق سب انسپکٹر کے عہدے پر بھرتی کرنے کاحکم

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے میرٹ پر پورا اترنے کے باوجود محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میں سب انسپکٹر کے عہدے پر بھرتی نہ کرنے کے خلاف دائر درخواست نمٹاتے ہوئے درخواست گزار کو قانون کے مطابق سب انسپکٹر کے عہدے پر بھرتی کرنے کاحکم دے دیا ۔مسٹر جسٹس ساجد محمود سیٹھی نے محمد عمران کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی جانب سے سیف الرحمان جسرا ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ درخواست گزار محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میں سب انسپکٹر کے لئے تحریری امتحان اور انٹرویو پاس کرچکا ہے ،اس کے باوجود اسے باوجود محکمہ میں بھرتی نہیں کیا جا رہا ، درخواست گزار کے وکیل نے نشاندہی کی کہ پنجاب پبلک سروس کمیشن کا امتحان پاس کرنے کے بعد نام ویٹنگ لسٹ میں ڈال دیا گیا ہے اوربارہ ماہ بعد پی پی ایس سی کے تحت دئیے گئے امتحان کو زائد المعیاد قرار دے کر نظر انداز کر دیا گیاہے، درخواست گزار کے وکیل نے مزید موقف اختیار کیا کہ تمام کوائف مکمل ہونے اور امتحان پاس کرنے کے باوجود بھرتی نہ کرنا غیر آئینی ہے لہٰذا درخواست گزار کو محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میں سب انسپکٹر کے طور پر میرٹ پر بھرتی کرنے کا حکم دیا جائے، عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد درخواست نمٹاتے ہوئے درخواست گزار کو محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میں سب انسپکٹر کے عہدے پر قانون کے مطابق بھرتی کرنے کاحکم دے دیا ۔

بھرتی کاحکم

مزید :

علاقائی -