چیلنجز کا خاتمہ صرف پارلیمنٹ ہی کر سکتی ہے: علامہ ساجد نقوی

چیلنجز کا خاتمہ صرف پارلیمنٹ ہی کر سکتی ہے: علامہ ساجد نقوی

  

معروف مذہبی سکالر علامہ سید ساجد علی نقوی نے کہاکہ عسکری قیادت کی ایوان بالا کو ملکی و بین الاقوامی صورتحال پر بریفنگ احسن اقدام ہے، پارلیمنٹ تمام اختیارات کا منبع ہے تو پھر اسے اپنا فعال کردار بھی ادا کرنا چاہیے ، اگر عسکری قیادت نے تمام ابہام دور کردیئے ہیں تو سیاستدانوں کو یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے آئین و قانون کی صحیح معنوں میں بالادستی اور حکمرانی کو یقینی بنانے کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھانا ہونگے، ملک کو بے شمار چیلنج کا سامنا ہے جن کا خاتمہ صرف متحد ہوکر پارلیمان ہی کر سکتی ہے ۔وہ روزنامہ پاکستان کے مقبول عام سلسلہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کر رہے تھے ۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کو چاہیے کہ وہ عوام کی امنگوں اور آئین و قانون کے مطابق صحیح معنوں میں آئین و قانون کی بالادستی اور حکمرانی کو یقینی بنانے کیلئے سنجیدہ اقدامات اٹھائے۔علامہ ساجد نقوی نے کہاکہ ملک کوملکی و بین الاقوامی سطح پر شدید مشکلات اور بے شمار چیلنجز کا سامنا ہے جن کا خاتمہ صرف متحدہوکر پارلیمان میں ہی کیا جاسکتاہے۔ انہوں نے کہاکہ عسکری قیادت کی جانب سے سینیٹ کی ہول کمیٹی کو بریفنگ سے ثابت ہوگیا کہ تمام ادارے پارلیمنٹ کو جواب دہ ہیں اور اس سے ملک میں جمہوریت اور جمہوری رویے مضبوط ہونگے ۔ ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ سیاسی صورتحال میں فوج کا کوئی کردار نہیں ۔جنر ل قمر جاوید باجوہ ایک پروفیشنل سپہ سالار ہیں ان سے ایسی کوئی توقع نہیں کی جا سکتی۔فوج کا نام استعمال کرنے والے افراد کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جانی چاہئے۔

علامہ ساجد نقوی

مزید :

صفحہ آخر -