’’بابے‘‘ نے آئین پر ڈاکہ ڈالنے والوں کا ساتھ دیا تھا: حسین احمد

’’بابے‘‘ نے آئین پر ڈاکہ ڈالنے والوں کا ساتھ دیا تھا: حسین احمد

  

جیکب آباد(این این آئی) جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات اور سابق سنیٹر حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ ماضی میں جو چور آئین پر ڈاکے ڈالنے آئے تھے اس ’’بابے‘‘ نے ان کا ساتھ دیا تھا، ایم ایم اے کی بحالی کا اعلان ہوا ہے ابھی مکمل بحال نہیں ہوئی وہ اگلے سال بحال ہوگی،ڈالر‘‘ کو تو ’’ڈار‘‘ نے روکا ہوا تھا اب ڈار چلا گیا تو ڈالر اوپر جائے گا ۔وہ جیکب آباد کے صحافیوں سے گفتگو کررہے تھے، حافظ حسین احمد نے کہا کہ عدلیہ کا ماضی تابناک نہیں رہا ہے مستقبل کے حوالے سے اسے عوامی اعتماد بحال کرنا ہوگا ، ماضی میں عدالت کا’’ بابا‘‘ علی بابا رہا ہے اور آئین پر ڈاکہ ڈالنے والوں کا ساتھ دیتا رہا ہے ،ماضی میں چند چورجو آئین پر ڈاکہ ڈالنے کے لیے آئے تھے اس ’’بابے‘‘ نے ان کا ساتھ دیا تھا اور اب چوری کے حوالے سے بھی چالیس چور وں سے بلاامیتاز فیصلے کرنے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس کی بحالی کے لیے ہم سب نے ملکر تحریک چلائی تھی اس وقت بھی میں نے کہا تھا کہ چیف تو بحال ہوگیا لیکن جسٹس بحال نہیں ہوا اب جسٹس کی بحالی کے لیے ضروری ہے کہ انصاف سستا اور سب کے لیے ہو، انہوں نے عدالت کی جانب سے سسیلین مافیا، گاڈ فادر اور ڈان جیسے ریمارکس پر کہا کہ چور کو چور کہا جائے لیکن ایسے ریمارکس آتے رہتے ہیں یہ پہلی بار ہوا ہے کہ ایسے ریمارکس وزیر اعظم کے منصب پر فائز شخصیت کے لیے استعمال ہوئے ہیں اور ایسی شخصیت جو کھیل میں ریفری کو ساتھ ملاکر کھیل کھیلتا رہا ہے برحال ایسی چیزیں اتنی جلدی ہضم نہیں ہونگی،حافظ حسین احمد نے مسلم لیگ ن کی جانب سے عدلیہ کے حوالے سے دئیے جانے والے بیانات پر کہا کہ نواز شریف ان کی بیٹی اور داماد کے لیے کوئی اور راستہ بچا ہی نہیں اس لیے وہ اس طرح کے بیانات دے رہے ہیں لیکن نواز لیگ میں راجہ ظفر الحق، چوہدری نثار اور شہباز شریف تک ایسے لوگ ہیں جو ایسے عمل کے خلاف نظر آتے ہیں ۔

مزید :

صفحہ آخر -