وزیر ابپاشی کی تمام سرکاری سکولوں کی تعمیر و مرمت میں رکاوٹیں دور کرنے کی ہدایت

وزیر ابپاشی کی تمام سرکاری سکولوں کی تعمیر و مرمت میں رکاوٹیں دور کرنے کی ...

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر آبپاشی و کھیل اور پاکستان تحریک انصاف ملاکنڈ ریجن کے صدر محمود خان نے محکمہ تعلیم کے حکام سے کہا ہے کہ وہ حلقہ پی۔کے 84 مٹہ سوات میں نئے اور پرانے سکولوں کی عمارتوں کی تعمیر ومرمت کے کاموں میں حائل تمام رکاوٹوں اور پیچیدگیوں کو دور کریں اور ان پر تعمیراتی کام جلد شروع کیا جائے ۔یہ بات انہوں نے بدھ کے روز ایجوکیشن کمیٹی روم پشاور میں ضلع سوات اور بالخصوص پی کے84 مٹہ میں زیر تعمیر نئے اور پرانے سکولوں کی عمارتوں کی تعمیر اور مرمت اور دیگر امور کا جائزہ لینے کے سلسلے میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی جبکہ اجلاس میں ایڈیشنل سیکرٹری ابتدائی و ثانوی تعلیم سہیل خان ، چیف پلاننگ آفیسر حشمت خان کے علاوہ ایگزیکٹیو انجینئر بلڈنگ سوات شہاب خان اور دیگر متعلقہ افسران بھی موجود تھے ۔ اجلاس میں مختلف گورنمنٹ زنانہ و مردانہ پرائمری سکولوں کی عمارتوں کی تعمیر اور مڈل و ہائی سکولوں کی اپ گریڈیشن کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ۔ اجلاس میں متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ وہ ایک ہفتے کے اندر اندر اس سلسلے میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں اور ان سکولوں کے پی سی ون وغیرہ جلد از جلد بھجوائیں تا کہ ان کو اگلے ڈی ڈی اے پی میں شامل کیا جائیں۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے میں معیار تعلیم کے فروغ کو اولین ترجیح دے رہی ہے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -