آزاد کشمیر یونیورسٹی کا 15واں کانووکیشن،13121گریجویٹس کو ڈگریاں ایوارڈ

آزاد کشمیر یونیورسٹی کا 15واں کانووکیشن،13121گریجویٹس کو ڈگریاں ایوارڈ

  

مظفرآباد(بیورورپورٹ)آزادکشمیر یونی ورسٹی کا15واں کانووکیشن ،13121گریجویٹس کو ڈگریاں ایوارڈ کر دی گئیں،40خو ش نصیب طلبہ گولڈ میڈل کے حق دار ٹھہرے،121ایم فل اور 5پی ایچ ڈی اسکالرز کو بھی ڈگریاں عطا کی گئیں،نیو وزیراعظم ہاؤس میں منعقدہ 15ویں کانووکیشن کے مہمان خصوصی صدر ریاست و چانسلر سردار مسعود خان تھے ،صدارت وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد کلیم عباسی نے کی ،کانووکیشن میں ممبر اسمبلی راجا عبدالقیوم خان ،وائس چانسلر ویمن یونی ورسٹی باغ پروفیسر ڈاکٹر محمد حلیم خان ،وائس چانسلر کوٹلی یونی ورسٹی پروفیسر ڈاکٹر سید دلنواز گردیزی ،کمانڈر ون اے کے بریگیڈ ،بریگیڈیر محمد اختر خان،سیکرٹریز حکومت ،ڈین سائنسز ،آرٹس ،سربراہان شعبہ جات ،فیکلٹی اراکین ،پرنسپل افسران ،طلبہ ،سول سوسائٹی ،والدین کی کثیر تعداد نے شرکت کی ،کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے صدر ریاست سردار محمد مسعود خان نے طلبہ اور ان کے والدین کو مبارک باد پیش کی اور کہا کہ یہ خوش قسمت طلبہ ہیں جنھیں آج ان کی محنت کا پھل مل رہا ہے ،انھوں نے اساتذہ کو بھی مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ ان کی محنت کی وجہ سے آج ایک نسل تیار ہو کر جا رہی ہے ،انھوں نے کہا کہ آزادکشمیر یونی ورسٹی ریاست کی تمام یونیورسٹیوں کی ماں ہے ،اس جامعہ نے کئی پروفیسرز ،ڈاکٹرز،انجینئرز پیدا کیے جو پوری دنیا میں ملک اور ریاست کا نام روشن کر رہے ہیں ،انھوں نے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر کلیم عباسی کو خصوصی طور پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے مختصر عرصے میں بہترین اصلاحات لائیں ،انھوں نے کہا کہ یہ خوشی کا مقام ہے کہ آزادکشمیر کاتعلیمی معیار پاکستان میں سب سے زیادہ ہے ،لیکن ہمیں مقدار کے ساتھ معیار کو مزید بڑھانا ہو گا ،ہمارے لوگ با صلاحیت ہیں،یونی ورسٹیوں میں میرٹ،انصاف لایا جائے ،ہمارے معاشرے میں سفارش وہی کرواتا ہے جس نے محنت نہیں کی ،سفارشوں سے ریاست اور حکومت میں بگاڑ پیدا ہوتا ہے ،معاشرے کے ہر فرد کو یہ بگاڑ روکنے کیلئے آگے آنا ہو گا ،صدر ریاست نے کہا کہ وائس چانسلر خود میرٹ پر تعینات ہوئے ،وہ میرٹ پر عمل درآمد یقینی بنائیں گے ،انھوں نے کہا کہ نیلم و جہلم کیمپسز میں اراضی کے مسائل حل کیے جائیں ،پورے ملک کو سکالرز کو بلائیں ،وفود بیرون ملک بھیجیں ،میڈیا اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کا دور ہے ،اس سے پورا استفادہ کیا جائے ،صدر ریاست نے آزادکشمیر حکومت کے ویژن اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اور اپنے بیرونی دوروں کے متعلق بھی شرکا ء سے اظہار خیال کیا ،قبل ازیں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد کلیم عباسی نے یونی ورسٹی کی مجموعی کارکردگی پر روشنی ڈالتے ہوئے ڈگری ہولڈر گریجویٹس اور ان کے والدین ،یونی ورسٹی اساتذہ کو مبارک باد پیش کی اور کہا کہ آج کا دن ان گریجویٹس کی زندگی کا سب سے یادگار دن ہے ،انھوں نے کہا کہ آزادکشمیر یونی ورسٹی آج 37سال کی ہو چکی ہے،جنرل حیات خان نے جو پودا لگایا وہ تنا آور درخت بن چکا ہے ،اس وقت اس یونی ورسٹی کے تین کیمپسز میں 9ہزا ر سے زائد طلبہ زیر تعلیم ہیں ، 27ڈگری پروگرامز چل رہے ہیں ،ملک کی 190جامعات میں ا 22واں نمبر ہے ،انھوں نے کہا کہ یونی ورسٹی میں 300فیکلٹی اراکین ہیں جن میں 77پی ایچ ڈی ہیں ،مستقبل میں ہماری ترجیح ہے کہ تمام فیکلٹی پی ایچ ڈی ہو اور ہائیر ایجوکیشن کے معیارات پر پورا اتر کر جامعہ کو پاکستان بھر میں پہلے نمبر پرلے جائیں ،انھوں نے مزید کہا کہ اس وقت شعبہ سافٹ ویئر اور الیکٹریکل انجینئرنگ کی منظوری ہو چکی ہے جب کہ اس وقت ایچ ای سی کے 13اور 2بیرونی امداد سے ریسرچ پراجیکٹ چل رہے ہیں ،12ملین روپے ریسرچ پراجیکٹس کے لیے مختص کیے گئے ہیں ،سیکڑوں طلبہ اسکالر شپ اور وزیراعظم پاکستان فیس واپسی پروگرام سے مستفید ہو چکے ہیں، کنگ عبداللہ کیمپس کی تعمیر پر کام کی رفتار تیز ہو چکی ہے ،انھوں نے تعاون پر صدر ریاست ،وزیراعظم ،حکومت آزادکشمیر ،ضلعی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا ، اسٹیج کی کارروائی رجسٹرار جامعہ شبیر احمد عباسی نے نبھائی ،آخر میں صدر ریاست کو شیلڈ پیش کی گئی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -