فنڈز کی بائیو میٹرک سسٹم کے تحت تقسیم‘ محکمہ زکوٰۃ و عشر میں کرپشن کا باب بند

فنڈز کی بائیو میٹرک سسٹم کے تحت تقسیم‘ محکمہ زکوٰۃ و عشر میں کرپشن کا باب بند

  

ملتان (سٹی رپورٹر)محکمہ زکوٰۃ و عشر میں کرپشن کا باب بند ہو گیا۔ مستحقین نادرا ریکارڈ کے مطابق انگوٹھا لگا کر مالی امداد حاصل کر سکیں گے۔ صوبائی زکوٰۃ کونسل کی جانب سے فنڈز کا اجراء، (بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

ڈسٹرکٹ زکوٰۃ آفس ملتان نے مستحقین کی فہرستوں کی تیاری شروع کر دی، اسکالر شپس کے لئے کالجز، یونیورسٹی اور مدارس سے درخواستیں طلب کر لی گئیں۔ زکوٰۃ فنڈز بائیو میٹرک سسٹم کے تحت تقسیم کئے جائیں گے۔ تفصیل کے مطابق صوبائی زکوٰۃ کونسل کی جانب سے مالی سال 2017۔18ء کی پہلی ششماہی کے لئے ضلع ملتان کو 7 کروڑ 10 لاکھ 21 ہزار روپے جاری کئے گئے ہیں۔ جولائی سے دسمبر 6 ماہ کے گزارا الاؤنس کے لئے 3 کروڑ 43 لاکھ، کالجز، یونیورسٹی اور کے طلبا و طالبات کی اسکالر شپس کے لئے 51 لاکھ 64 ہزار، ہیلتھ کئیر کے لئے 28 لاکھ، جہیز کی مد میں 28 لاکھ 57 ہزار، نابینا افراد کے لئے 19 لاکھ، ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس کے لئے 2 کروڑ 15 لاکھ اور ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹس کے فارغ التحصیل طلباء و طالبات کو برسر روزگار کرنے کے لئے 25 لاکھ روپے جاری کئے گئے ہیں۔ گزاراالاؤنس کے تحت ضلع بھر کے 5580 مستحقین کو گزشتہ 6 ماہ کے لئے 6 ہزار روپے دئیے جائیں گے۔ کالجز، یونیورسٹی اور مدارس کے طلباء طالبات کے اسکالر شپس کے سلسلہ میں درخواستیں طلب کر لی گئی ہیں اس سلسلہ میں اداروں کو محکمہ زکوٰۃ و عشر کی جانب سے لیٹر بھی بھیج دئیے گئے ہیں۔ امداد حاصل کرنے والے تمام مستحقین کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ کرنے کا کا شروع کر دیا گیا ہے۔ نادرا ریکارڈ کے مطابق مستحقین ایزی پیسہ شاپ پر اپنا انگوٹھا لگانے کے بعد امداد حاصل کر سکیں گے۔ اس سسٹم کے تحت کوئی بھی غیر متعلقہ شخص کسی بھی مستحق کی مالی امداد حاصل نہیں کر سکے گا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -