گڑھا موڑ ‘ اندھے قتل کا سراغ مل گیا‘ دوست قاتل نکلے

گڑھا موڑ ‘ اندھے قتل کا سراغ مل گیا‘ دوست قاتل نکلے

  

گڑھا موڑ(سپیشل رپورٹر) چک112 ڈبلیو بی کا رہائشی 19 سالہ نزاکت ولد رحمت انصاری جس کا والد اور بھائی وقاص بیرون ملک محنت مزدوری کرتے ہیں مقتول نزاکت علی گڑھا موڑ میں کپڑے کی دوکان پر کام کرتا تھا اور اس کے ساتھ (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

ہی اس کا دوست چک194 ڈبلیو بی کا رہائشی محمد یوسف قوم سہو اسی دوکان پر کام کرتا تھا مقتول کے والد اور بھائی نے ساٹھ ہزار روپے بھیجے جو مقتول نے بینک سے نکالے تو اس رقم کی خبر اس کے دوست یوسف کو ہو گئی رقم دیکھتے ہی اس کی نیت میں فطور آگیا اور اپنے دوست چک194 ڈبلیو بی کے رہائشی عباس بھول سے رابطہ کیا کہ نزاکت علی کے پاس ساٹھ ہزار روپے موجود ہیں اس کا بندو بست کرنا ہے اور یہ رقم دونوں میں تقسیم کر لیں گے جس پر دونوں ملزمان یوسف اور عباس نے مقتول نزاکت علی کو ورغلاء کر چک194 ڈبلیو بی لے گئے اور راستہ میں فائرنگ کر کے قتل کر دیا اور لاش چک190 ڈبلیو بی کے قریب ویرانہ میں پھینک کر مقتول کا موٹر سائیکل قریبی نہر میں پھینک دیا تھا پولیس چوکی گڑھا موڑ تھانہ مترو کی مسلسل محنت اور کاوش سے مقتول کے نمبر کا ڈیٹا حاصل کیا گیا اور ملزمان کو ٹریس کر لیا گیا اس طرح ایک ماہ قبل ہونے والے اندھے قتل کا سراغ مل گیا اور ملزمان سے نہر میں پھینکی ہوئی موٹر سائیکل بر آمد کر لی گئی اور ملزمان نے اعتراف جرم کر لیا ہے جبکہ پولیس نے ایک ماہ قبل نا معلوم افراد کے خلاف مقدمہ نمبر536/17 درج کیا تھا اندھے قتل کا سراغ لگانے پر شہریوں سول سوسائٹی اور سیاسی و سماجی شخصیات نے پولیس کی کارکردگی کو سراہا ہے۔

دوست قاتل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -