’جتنا 2 نمبر وکیل ہوتا ہے اس کو یہ چیز بھی زیادہ ملتی ہے ‘ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے تقریب سے خطاب کے دوران ایسی بات کہہ دی کہ کئی لوگ شرم سے پانی پانی ہوگئے

’جتنا 2 نمبر وکیل ہوتا ہے اس کو یہ چیز بھی زیادہ ملتی ہے ‘ جسٹس شوکت عزیز ...
’جتنا 2 نمبر وکیل ہوتا ہے اس کو یہ چیز بھی زیادہ ملتی ہے ‘ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے تقریب سے خطاب کے دوران ایسی بات کہہ دی کہ کئی لوگ شرم سے پانی پانی ہوگئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کہا ہے کہ جتنا دو نمبر وکیل ہوتا ہے بار کا صدر اس کی اتنی ہی حمایت کرتا ہے، جوڈیشل سسٹم میں کرپشن بڑھتی جا رہی ہے۔ کسی پیر، فقیر یا درویش کی دعا ماں کی دعا سے بڑی نہیں ہوسکتی۔

ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کہا کہ جوڈیشل سسٹم میں کرپشن بڑھتی جا رہی ہے، کتنے وکلا ایسے ہیں جنہوں نے چیمبرز رکھے ہوئے لیکن وہاں بیٹھ کر تیاری نہیں کرتے، سکروٹنی کی جائے تو 70 فیصد وکیل ایسے نکلیں گے جو چیمبر کے حق دار نہیں ہیں، جتنا دو نمبر وکیل ہوتا ہے الیکشن میں اتنی ہی پروٹیکشن لینا ہے جتنا 2 نمبر وکیل ہوگا بار کا صدر اتنا ہی اس کو سپورٹ کرے گا۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی کی اس بات پر ہال تالیوں سے گونج اٹھا ۔

انہوں نے تقریب میں موجود دیگر ججز کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ’جج صاحبان سن رہے ہیں کہ کسی نے آپ کی قبر میں جا کر جواب نہیں دینا ، کسی کو دانستہ طور پر فائدہ دیا تو اس کا جواب آپ نے ہی دینا ہے‘۔

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے کہا کسی پیر، فقیر یا درویش کی دعا ماں کی دعا سے بڑی نہیں ہوسکتی، اپنی ماں کے پاﺅں دبا کر دیکھیں اس سے دعا لیں، آپ کی زندگی بدل جائی گی۔ انہوں نے وکلا کو مشورہ دیا کہ وکلا کبھی بلامعاوضہ بھی لوگوں کے کیس کردیا کریں۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -