” واپڈا بجلی چوروں کو پکڑنے کی بجائے ہر مہینے اووربلنگ کرکے کاشتکاروں کوٹیکہ لگارہا ہے “قصور کے معروف پرگریسو کاشتکار محمد یونس

” واپڈا بجلی چوروں کو پکڑنے کی بجائے ہر مہینے اووربلنگ کرکے کاشتکاروں ...
” واپڈا بجلی چوروں کو پکڑنے کی بجائے ہر مہینے اووربلنگ کرکے کاشتکاروں کوٹیکہ لگارہا ہے “قصور کے معروف پرگریسو کاشتکار محمد یونس

  

لاہور (زرعی رپورٹر)”واپڈا بجلی چوری کا سدباب کرنے کی بجائے کاشتکاروں کو اووربلنگ کرکے انہیں شدید مالی بحران سے دوچار کردیتا ہے۔ بلوں پر ریڈنگ کی فوٹو لگاکر بجلی چوری کرنے والی کالی بھیڑوں کو آسانی سے پکڑا جاسکتا ہے“ ضلع قصورکے ممتاز پروگریسو کاشتکار محمد یونس نے ڈیلی پاکستان آن لائن کے ساتھ بات چیت کے دوران کہا ہے کہ جن علاقوں میں نہری پانی دستیاب نہیں وہاں چھوٹے بڑے کاشتکار واپڈا کے رحم و کرم پر ہوتے ہیں ۔واپڈا کا عملہ بجلی چوری کرانے میں ملوث ہوتا ہے جس کی وجہ سے کاشتکاروں کو لائن لاسز کے نام پر اووربلنگ کی جاتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت جہاں کاشتکاروں کی بہبود کے بہت سے اقدامات اٹھا رہی ہے وہاں اسکو واپڈا کے علاقائی عملہ کی کرپشن کا بھی نوٹس لینا چاہئے ۔انہوں نے بتایا کہ موسم گرما میں عام طور پر جب کسی کاشتکار کو ٹیوب چلاکر پانی سے فصلوں کو سیراب کرنا ہوتا ہے تو اس مد میں اسے اووربلنگ کی وجہ سے کم از کم پچاس ہزار تک ماہانہ بل ادا کرنا پڑجاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ لوڈشیڈنگ کی وجہ سے ابھی بجلی سارادن دستیاب نہیں ہوتی ،اگر بجلی متواتررہے تو واپڈا کی جانب سے کی جانے والی اووربلنگ سے کاشتکاروں کو لاکھوں روپے کے بل ہر مہینہ بھرنے پڑجائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ واپڈاسب ڈویژن کا عملہ چوری ہونے والی بجلی کو لائن لاسز کی آڑ میں کاشتکاروں کو ٹیکہ لگاتے ہےں۔ محمد یونس نے ایم اسی شماریات کی ڈگری حاصل کررکھی ہے۔انہوں نے کہا کہ پڑھے لکھے زمیندار ملک میں زرعی انقلاب لانے کے لئے سرگرم ہیں ۔انہوں نے حکام بالا سے مطالبہ کیا ہے کہ کاشتکاروں کو اوور بلنگ سے نجات دلائی جائے اورجیسا کہ واپڈا کے ایس او پیز کے مطابق ہر بل پر میٹر ریڈنگ کی تصویر ہونا لازمی ہے،ہر سب ڈویژن کو اس کا پابند بنایا جائے اور جس سب ڈویژن میں بلوں پر میٹر ریڈنگ کی فوٹو نہیں ہوگی اس پر سخت کارروائی کرکے متعلقہ عملہ کو نوکریوں سے نکال باہر کیا جائے تاکہ وہ اصلاحات کی راہ میں رکاوٹیں پیدا نہ کرسکیں۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

مزید :

کسان پاکستان -