شمالی کوریا کا فوجی سرحد پار کر کے ملک سے بھاگ نکلا، ساتھی فوجیوں کی فائرنگ سے شدید زخمی، بالآخر ہوش میں آیا تو سب سے پہلی چیز کیا مانگی؟ سن کر ڈاکٹروں کو بھی ہنسی آگئی

شمالی کوریا کا فوجی سرحد پار کر کے ملک سے بھاگ نکلا، ساتھی فوجیوں کی فائرنگ ...
شمالی کوریا کا فوجی سرحد پار کر کے ملک سے بھاگ نکلا، ساتھی فوجیوں کی فائرنگ سے شدید زخمی، بالآخر ہوش میں آیا تو سب سے پہلی چیز کیا مانگی؟ سن کر ڈاکٹروں کو بھی ہنسی آگئی

  

سیﺅل(مانیٹرنگ ڈیسک) شمالی کوریا کا ایک فوجی بارڈر پر فرار ہوا اور سرحد پار کرکے جنوبی کوریا میں داخل ہو گیا جس پر اس کے ساتھیوں نے فائرنگ کرکے اسے شدید زخمی کر دیا۔ جب اسے جنوبی کوریا کے ایک ہسپتال میں ہوش آیا تو اس نے چھوٹتے ہی ڈاکٹروں سے ایسی چیز مانگ لی کہ سن کر ان کے لیے ہنسی روکنا مشکل ہو گیا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 24سالہ چونگ سانگ نامی فوجی نے بارڈر کے قریب گاڑی روکی اور پیدل فرار ہو کر جنوبی کوریا میں داخل ہوا، جس پر اس کے ساتھی شمالی کورین فوجیوں نے فائرنگ کر دی۔ اسے سینے، پیٹ، کندھوں اور دیگر حصوں میں گولیاں لگیں لیکن وہ جنوبی کوریا کی حدود میں داخل ہونے میں کامیاب ہو گیا جہاں سے اسے جنوبی کورین فوجیوں نے آ کر ریسکیو کیا۔

جنوبی کورین فوجیوں نے اسے اجو یونیورسٹی ہسپتال پہنچایا جہاں اسے دو دن بعد ہوش آیا تو اس نے ڈاکٹروں سے کھانے کے لیے ’چوکو پیز‘ نامی چاکلیٹ کیک کی فرمائش کر دی۔ چوکو پیز کیک شمالی اور جنوبی کوریا، دونوں میں ہی بے حد مقبول ہے۔جب چونگ سانگ کی اس فرمائش کی خبر نشر ہوئی تو چوکو پیز بنانے والی کمپنی اورین نے کیک کے 100ڈبے اسے بھیج دیئے۔ کمپنی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ”ہم نے چونگ سانگ کو جنوبی کوریا میں خوش آمدید کہنے کے لیے اسے کیک بھیجے ہیں۔اس کا مقصد کمپنی کی تشہیر کرنا ہرگز نہیں، ہم جانتے ہیں کہ شمالی کوریا سے فرار ہو کر جنوبی کوریا آنے والے لوگ کتنی مشکلات سے گزر کر آتے ہیں۔ ان کا والہانہ استقبال ہم پر لازم ہے۔“

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

مزید :

بین الاقوامی -