امریکہ اور اسرائیل کے سب سے قریبی ظالم دوست نے بھی ٹرمپ کے فیصلے کی مخالفت کردی، جان کر آپ بھی حیرت میں ڈوب جائیں گے

امریکہ اور اسرائیل کے سب سے قریبی ظالم دوست نے بھی ٹرمپ کے فیصلے کی مخالفت ...
امریکہ اور اسرائیل کے سب سے قریبی ظالم دوست نے بھی ٹرمپ کے فیصلے کی مخالفت کردی، جان کر آپ بھی حیرت میں ڈوب جائیں گے

  


نیویارک(ڈیلی پاکستان آن لائن) القدس کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کرنے کے اعلان کے خلاف ترکی اور یمن کی مشترکہ قرارداد اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کثرت رائے سے منظور کر لی گئی، قرارداد کی حمایت میں امریکہ اور اسرائیل کے انتہائی قریبی دوست ملک بھارت نے بھی ووٹ دیا۔

پاکستان پیسوں کا بھوکا ہے  اور  نہ ہی  دھمکیوں سے ڈرتا ہے:ملیحہ لودھی

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے القدس کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کرنے کے حوالے سے پوری دنیا میں شدید اضطراب پایا جاتا ہے، ذاتی اختلافات کو بھلا کر اقوام عالم فلسطینی عوام کی حمایت میں اکٹھے ہوگئے ہیں ، ترکی اور یمن کی جانب سے اقوام متحدہ میں امریکی فیصلے کے خلاف قرارداد پیش کی گئی ، اس قرارداد کے حق میں عالمی ادارے کے 128رکن ممالک نے ووٹ دیاجبکہ 9ممالک نے اس قرارداد کی مخالفت کی، اس اجلاس میں سب حیران کن قردار بھارت کا تھا جس کے مندوب نے قرارداد کے حق میں ووٹ دیا اور مطالبہ کیا کہ امریکی صدر فوری طور پر اپنا فیصلہ واپس لیں۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں

مزید : بین الاقوامی