خیبر،ویلج کونسل 15 خیبر (3) کے خواتین سٹیشن بدترین دھاندلی

خیبر،ویلج کونسل 15 خیبر (3) کے خواتین سٹیشن بدترین دھاندلی

  

خیبر(بیورورپورٹ)ویلیج کونسل 15 خیبر تھری کے خواتین پولنگ سٹیشنوں پر بدترین دھاندلی ہوئی، الیکشن کمیشن کا عملہ بک گیا تھا، خواتین کو ووٹ کے حق سے محروم کر دیا گیا، عدالت سے رجوع کرینگے، اس حلقے کے نتائج کو تسلیم نہیں کرینگے،ضیاالحق آفریدی کی پریس کانفرنس،جماعت اسلامی کے رہنما اور وی سی 15 خیبر ٹو سے جنرل کونسلر کے امیدوار ضیاالحق آفریدی نے لنڈی کوتل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پولیس جانبدار تھی جو خواتین پولنگ اسٹیشنز پر تعینات تھی الیکشن عملہ نااہل، ناتجربہ کار اور کرپٹ تھا خیبر ولی خیل اور سلطان خیل کے خواتین پولنگ سٹیشنوں پر صرف ایک ایک بوتھ تھی حالانکہ بتایا گیا تھا کہ ہر پولنگ اسٹیشنز پر تین پولنگ بوتھ ہونگیں اور پولیس کی جانبداری اور الیکشن عملے کے بک جانے اور طرفداری کے باعث ہزاروں خواتین ووٹ کے حق سے محروم کر دی گئیں پولیس والے بھی بک گئے تھے ولی خیل خیبر خواتین پولنگ بوتھ پر کئی ووٹ کی کتابیں چوری کی گئی تھیں فیض اللہ، اجمل اور شوکت نے وہاں ماحول خراب کر دیا تھا اور ساری دھاندلی کے ذمہ دار یہ تین افراد ہیں ضیاالحق آفریدی نے کہا کہ وہ اپنے مدمقابل اجمیر آفریدی کی جیت کو تسلیم نہیں کرینگے الیکشن کمیشن وی سی 15 خیبر ٹو کے نتائج کو روک دیں اور اس حلقے میں دوبارہ ووٹنگ کی جائے بصورت دیگر وہ عدالت سے رجوع سمیت احتجاج کے تمام آپشنز استعمال کرینگے لیکن بوگس الیکشن کے نتائج تسلیم نہیں کرینگے ضیاالحق آفریدی نے کہا کہ انہوں نے بڑے بڑے دعوے کرنے والوں کو شکست دی ہے لیکن اجمیر آفریدی کی بوگس جیت کو تسلیم نہیں کرینگے انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن نے انتخابات کے نام پر ڈرامہ رچایا اور ایک ایک پولنگ اسٹیشن پر ہزاروں خواتین کو ووٹ کے حق سے محروم کر دیا گیا جو بنیادی انسانی اور آئینی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -