فضل الرحمان کا ملکی پارلیمانی سیاست  میں کوئی کردار نہیں رہا، فرخ حبیب

   فضل الرحمان کا ملکی پارلیمانی سیاست  میں کوئی کردار نہیں رہا، فرخ حبیب

  

 اسلام آباد(آئی این پی)وزیر مملکت برائے اطلاعات ونشریات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان کی ایزی لوڈ کی دکان بند ہو چکی ہے، ان کا پاکستانی پارلیمانی سیاست میں کوئی کردار نہیں،مولانا فضل الرحمان کو تو صاف شفاف انتخابات کرانے پر وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کرنا چاہیئے،  پاکستان تحریک انصاف کو 2018کے الیکشن میں ریکارڈ ووٹ ملے، 2023کے الیکشن میں کارکردگی کی بنیاد پر اس سے ڈبل ووٹ لیں گے، جو ہر حکومت میں اقتدار کے مزے لیتے رہے تھے، آر یا پار والے بری طرح خوار ہو رہے ہیں،پیر کو مولانا فضل الرحمان کی میڈیا سے گفتگو پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے وزیر مملکت فرخ حبیب نے کہا کہ فضل الرحمان، ن لیگ اور پیپلز پارٹی صرف کرپشن بڑھا سکتی ہے، ملک چلانا ان کے بس کی بات نہیں،فضل الرحمان 3سال سے سیاسی بے روزگار ہیں، اپنے روزگار کے لیے جمہوری حکومت کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں،انہوں نے کہا کہ جس کا اپنا دامن اور ماضی داغ دار ہو وہ صادق و امین قرار پانے والے وزیراعظم عمران خان کے خلاف کس منہ سے بات کرتے ہیں، دنیا بھر میں ریکارڈ مہنگائی ہوئی ہے بعض شر پسند عناصر پاکستان کی مہنگائی کی آڑ میں اپنی سیاسی دکان چمکا رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ماضی کے قرضوں کی اقساط اور ان پر سود کی ادائیگی کے لیے مجبور ہو کر قرض لئے،فرخ حبیب نے طنز کیا کہ مولانا فضل الرحمان اگر انتخابات جیت جائیں تو صاف شفاف اور اگر ہار جائیں تو دھاندلی؟ مولانا فضل الرحمان کو تو صاف شفاف انتخابات کرانے پر وزیراعظم عمران خان کا شکریہ ادا کرنا چاہیئے۔ اس دھاندلی زدہ نظام کو ختم کرنے کے لیے وزیر اعظم عمران خان سیاست میں آئے ہیں،فرخ حبیب نے کہا کہ مولانا صاحب اگر آپ دھاندلی سے چھٹکارہ چاہتے ہیں تو ای وی ایم کی جانب آئیں،انہوں نے کہا کہ  پاکستان تحریک انصاف کو 2018کے الیکشن میں ریکارڈ ووٹ ملے، 2023کے الیکشن میں کارکردگی کی بنیاد پر اس سے ڈبل ووٹ لیں گے، پی ڈی ایم کے نام پر ذاتی مفادات کے تحفظ کے لیے انتشار پھیلانے والے پہلے بھی ناکام ہوئے آئندہ بھی ناکام ہونگے، سب کو معلوم ہے کہ عوام میں آپ کی پذیرائی صفر ہو چکی ہے، مارچ کی دھمکی دینے والے پہلے یہ بتائیں کہ استعفے کہاں ہیں؟ یہ کھوکھلا مارچ ہے، جس میں عوام کی کوئی نمائندگی نہیں ہوگی، انہوں نے کہا  کہ جو ہر حکومت میں اقتدار کے مزے لیتے رہے تھے، آر یا پار والے بری طرح خوار ہو رہے ہیں۔

فرغ حبیب

مزید :

صفحہ اول -