فوجیوں کے گلے کاٹنے کا عمل انتہائی افسوس ناک ہے ،ساجد میر

فوجیوں کے گلے کاٹنے کا عمل انتہائی افسوس ناک ہے ،ساجد میر

 لاہور (پ ر) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ افسوس مذاکرات سبوتاژ کرنے والی قوتیں کامیاب ہوگئیںیہ ملک وقوم کے لیے بڑی بدقسمتی ہے اس صورتحال نے پورے ملک کوبارود کے ڈھیر پر بٹھادیا ہے فوجیوں کے گلے کاٹنے کا عمل انتہائی افسوس ناک ہے فوج کو ایک نئے آپریشن میں جھونکنادانشمندی نہیں، آپریشن کے نتائج ہمیشہ منفی نکلے ، بڑے پیمانے پر خون ریزی کا سلسلہ شروع ہو سکتاہے آپریشن کے لیے فضا بنائی گئی ،مذاکرات کے دروازے مکمل طور پر بند نہیں کردینے چاہییںعلماءکے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا مذاکرات کے حامیوں کے بارے میں یہ تاثر دینا ناانصافی ہے کہ وہ طالبان کے حامی ہیں، انکی دہشت گرد کارروائیوں کی ہم پرزور مذمت کرتے ہیں طالبان کے نکتہ نظر سے یہ مذاکرات کیلئے سازگار ترین ماحول تھا لیکن اسکے باوجود دہشت گردی کی کارروائیوں میں مزید شدت دیکھنے میں آئی اگر ہمارے دوست ممالک پاکستان کو اپنی جنگ کا اکھاڑا بناتے ہیں تو اس سے بڑی دشمنی کیا ہو سکتی ہے دریں اثناءانہوں نے آج مولانا یوسف پسروری سمیت علماء پر جھوٹے مقدمے اور انکے اغوا کے خلاف ملک گیر یو م احتجاج منانے کا اعلان کیا ہے مساجد میں علماءمذمتی قراردادیں پیش کریں گے اور پرامن مظاہرے اور ریلیاں نکالی جائیں گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1