ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس: حکومت پاکستان کا دومبینہ ملزموں کو برطانیہ کے حوالے کرنے کافیصلہ

ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس: حکومت پاکستان کا دومبینہ ملزموں کو برطانیہ کے ...

پہلے بھی درخواست آئی تھی ، دوبارہ درخواست کا آئینی ماہرین جائزہ لے رہے ہیں : وزیرداخلہ

ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس: حکومت پاکستان کا دومبینہ ملزموں کو برطانیہ کے حوالے کرنے کافیصلہ

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان نے سکاٹ لینڈ یار ڈ کی درخواست پر ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کے دو مشتبہ ملزموں کو برطانیہ کے حوالے کرنے کا فیصلہ کر لیاجبکہ برطانیہ کی طرف سے قانونی مدد مانگے جانے کی تصدیق وفاقی وزیرداخلہ چوہدری علی خان نے بھی کردی ہے ۔مقامی میڈیا کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما عمران فاروق قتل کیس کے دو مشتبہ ملزموں کو سیکیورٹی اداروں نے کراچی کے قائداعظم انٹرنیشنل ائیرپورٹ سے اپنی تحویل میں لیا تھاجن کی حوالگی کے لیے قانونی تقاضے پورے کیے جا رہے ہیں۔ برطانوی حکومت نے پاکستان کو 70 صفحات پر مشتمل خط میں عمران فاروق کے قتل سے متعلق حقائق سے آگاہ کیا تھا جس کے مطابق قتل کے تمام سرے پاکستان میں آ کر ملتے اور ختم ہوتے تھے۔ برطانوی حکومت کے خط پر پاکستان میں گزشتہ تین ہفتے سے غور و خوض ہو رہا تھا۔ دونوں ملزم برطانیہ سے کولمبو اور وہاں سے کراچی پہنچے تھے جہاں پر پہلے سے موجود ایک شخص کو ان دو افراد کی” میزبانی“ کا فریضہ سپرد کیا گیا تھا تاہم پاکستانی اداروں نے بروقت کارروائی کر کے دونوں ملزموں کو ائیرپورٹ سے اپنی تحویل میں لیا تھا۔اس حوالے سے وزیر داخلہ چوہدری نثارنے تصدیق کرتے ہوئے بتایاکہ برطانیہ نے پانچ ماہ قبل بھی قانونی مددکی درخواست کی تھی لیکن پھر درخواست واپس لے لی گئی ، اب دوبارہ درخواست پر قانونی ماہرین جائزہ لے رہے ہیں ، جو بھی قدم اُٹھائیں گے ، قوم کوآگاہ کریں گے ۔ ذرائع نے بتایاکہ لندن اور اسلام آباد کے درمیان دونوں ملزموں کی حوالگی کیلئے قانونی تقاضے پورے کیے جارہے ہیں جن کے بعد دونوں ملزمان کو برطانیہ کے حوالے کردیاجائے گا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...