سندھ میں حلقہ بندیوں کیخلاف اپیل پر سپریم کورٹ نے فیصلہ محفوظ کر لیا

سندھ میں حلقہ بندیوں کیخلاف اپیل پر سپریم کورٹ نے فیصلہ محفوظ کر لیا
Supreme Court

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ نے حلقہ بندیوں سے متعلق سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیلوں پر فیصلہ محفوظ کر لیا ، چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی نے کہا ہے کہ لوگوں کوحلقہ بندیوں پر اعتماد نہیں تو انتخابات کیسے شفاف ہوں گے ؟ کوئی ادارہ اپنے اختیارات سے تجاوز کرے تو عدالت کو مداخلت کا اختیار ہے۔چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے حلقہ بندیوں کے فیصلے کے خلاف سندھ حکومت اور الیکشن کمیشن کی اپیلوں کی سماعت کی۔اٹارنی جنرل سلمان بٹ نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کی حلقہ بندیوں کا اختیار صوبائی حکومت کا ہے۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ صوبائی حکومت کو مرضی کی حلقہ بندیوں کی اجازت کیسے دی جا سکتی ہے؟عدالتی معاون خواجہ حارث نے کہا کہ جہاں قانون خاموش ہو وہاں الیکشن کمیشن آئینی مینڈیٹ کے تحت انتخابی عمل انجام دے سکتا ہے، حلقہ بندیاں بھی انتخابی عمل کا حصہ ہیں۔ سندھ حکومت کے وکیل فاروق نائیک نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم کا بنیادی مقصد صوبائی خود مختاری، مالی، انتظامی اور سیاسی اختیارات کو نچلی سطح پر منتقل کرنا تھا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ صوبوں کو آئینی خودمختاری دیتے ہوئے یہ بھی مدنظر رکھا گیا تھا کہ وہ آئینی کمانڈ کی پابندی کرے گی،انتخابات کا انعقاد الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ آئین ایک زندہ دستاویز ہے جس کی تشریح عدالت کا اختیار ہے۔ فارووق ایچ نائیک نے میثاق جمہوریت کی کاپی عدالت میں پیش کی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ میثاق جمہوریت کی شق 10 کے تحت بلدیاتی انتخابات صوبائی الیکشن کمیشن نے کروانا تھے، سیاسی رہنماو¿ں نے 18ویں ترمیم میں مثبت قلابازی لگائی، 18ویں ترمیم میں بلدیاتی انتخابات کا انعقاد الیکشن کمیشن کو دے دیا گیا ، صوبے بلدیاتی قوانین کے ذریعے الیکشن کمیشن کو حلقہ بندیوں کے اختیار سے کیوں محروم کر رہے ہیں۔ فاروق نائیک کا کہنا تھا کہ 140 اے کے تحت صوبوں نے الیکشن کمیشن کو ایک نظام دیا۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ اگر بلدیاتی نظام سے الیکشن کمیشن مفلوج ہو تو پھر کیا کرنا چاہئے ،، مقصد نظر آ رہا ہے کہ انتخابات کے التواءکا بہانہ مل جائے، کہیں بلدیاتی انتخابات کا میچ فکس تو نہیں۔ سپریم کورٹ نے درخواست گزار اور فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر حلقہ بندیوں سے متعلق سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کےخلاف اپیلوں پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...