بجلی کے شدید بحران کے حل کیلئے حکومتی کاوشوں میں ہاتھ بٹارہے ہیں: دانیال صدیقی

بجلی کے شدید بحران کے حل کیلئے حکومتی کاوشوں میں ہاتھ بٹارہے ہیں: دانیال ...

  

لاہور( کامرس ڈیسک)پر یمئر انر جی کے کنٹر ی ہیڈ دانیال صدیقی کا کہنا ہے کہ ملک میں بجلی کے شدید بحران کے تنا ظر میں ان کا ادارہ حکومتی کو ششوں میں اس کا ہاتھ بٹا رہا ہے۔انھوں نے بتایا کہ لیسکو ا ور پنجاب حکومت کا انر یجی ایفی شینسی ڈیپار ٹمنٹ اس سلسلہ میں ہمار ے ساتھ بھر پور تعاون کر رہا ہے۔انھوں نے کہا ضرو ر ت اس امر کی ہے کہ عوام کی سو چ میں یہ انقلابی سو چ پیدا کی جائے کہ زبر دست مہنگائی کے اس دور میں بجلی ا ستعمال کرنے کے روایتی طر یقوں سے ہٹ کر بھی زندگی بہتر طور پر زیادہ مو ثر انداز میں گذاری جا سکتی ہے۔یاد ر

ہے کہ پر یمئر انر جی کی جانب سے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور کو چار تجاویز پر مشتمل ایک تفصیلی فر یبلٹی رپو رٹ فراہم کی گئی ہے کہ کس طر ح کالج کے بجلی کے بلوں میں سالانہ ایک کرو ڑ 20لاکھ روپے(10لاکھ روپے ماہانہ) کی بچت کی جاسکتی ہے ۔پر یمئر انر جی پاکستان کی جانب سے ملک میں بجلی کے بحران کے خاتمہ کیلئے بجلی کی بچت کے حوالے سے ’’ انر جی کنزر ویشن اینڈ آڈٹ پرو گرام‘‘ (ای کیپ)متعارف کر ایا ہے جس کے تحت عوام کیساتھ ساتھ بجلی استعمال کرنیوالے بڑے بڑے اداروں ،رہائشی عمارات و کالونیوں ،فیکٹر یو ں ،پلازوں اور تعلیمی اداروں وغیر ہ میں بجلی کی بچت کرنے، متبادل تنصیبات کے استعمال کو رواج دینے اور حتمی طور پر شمسی توانائی کے استعمال کو اختیار کرنے جیسے ا قدامات تجویز کئے جاتے ہیں۔

اس سلسلے میں جو اقدامات تجویز کئے جاتے ہیں ا ن میں ہیلو جن بلبوں اور روائتی ٹیو ب لائٹس کی جگہ ایل ای ڈیز استعمال کرنے اورعا م پنکھوں کی جگہ انر جی ایفیشنٹ پنکھے جبکہ روائتی ائر کنڈیشنرز کی جگہ انورٹر بیسڈ اے سی نصب کرنے کیساتھ ساتھ سو لو انر جی سسٹم اپنانے کا مشو رہ دیا جاتا ہے۔بجلی بچانے کے کسی بھی خواہشمند کو ا یک سرسری سروے کے ذریعے یہ بتایا جاتا ہے کہ عمارت میں زیراستمعال بجلی کی تنصیبات میں کیا کیا ردو بدل کیا جا سکتا ہے ۔ اس پر و گرام سے استفادہ کرنیوالوں نے بجلی کے بلو ں میں حیرت انگیز بچت کی ا ور شمسی توانائی کے استمعال کو اختیار کرنے کی صور ت میں خود بجلی پیدا بھی کی او پر یمئر انر جی کا نیٹ میٹر نگ سسٹم اپنانے کے بعد وہ فالتو بجلی کو نیشنل گرڈ کو فر وخت کرنے کے بھی قابل ہو گئے۔

مزید :

کامرس -