بائیو ماس سے سستی بجلی پیدا کر کے توانائی بحران حل ہوسکتا ہے:رپورٹ

بائیو ماس سے سستی بجلی پیدا کر کے توانائی بحران حل ہوسکتا ہے:رپورٹ

  

اسلام آباد (اے پی پی) گنے، چاول اور مکئی وغیرہ سے حاصل ہونے والی سالانہ بائیو ماس سے سستی بجلی پیدا کر کے توانائی کی طلب اور رسد میں موجود فرق کو ختم کیا جا سکتا ہے۔ عالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک کی متبادل ذرائع سے توانائی کے حصول کی لئے تیار کردہ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں گنے کے پھوگ، چاول کے چھلکے اور مکئی سمیت دیگر مختلف اقسام کے بائیو ماس وغیرہ کی توانائی کا تخمینہ 62 ہزار 785 گیگا واٹ سالانہ کے مساوی ہے جو توانائی کے حصول کا ایک بڑا زریعہ ثابت ہو سکتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق سالانی حاصل ہونے والے بائیو ماس میں گنے کے پھوگ کا حصہ 64.9 فیصد جبکہ چاول کے چھلکے اور سوکھے پودوں کا حصہ 20 فیصد اور مکئی کا حصہ 15.1 فیصد کے مساوی ہے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں متبادل ذرائع سے توانائی کے کئی پیداواری منصوبوں پر کام جاری ہے جن کی تکمیل سے صارفین کو سستی بجلی کی فراہمی کو یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔

مزید :

کامرس -