واپڈا نے داسوہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے مین سول ورکس کے کنٹریکٹس فائنل کر لئے

واپڈا نے داسوہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے مین سول ورکس کے کنٹریکٹس فائنل کر لئے

  

لاہور(کامرس رپورٹر)واپڈا نے داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے مین سول ورکس کے کنٹریکٹس کو حتمی شکل دے دی ہے اور اِس منصوبے کی سٹیج 1- کے مین سول ورکس پر بہت جلد تعمیراتی کام شروع کر دیا جائے گا ۔سٹیج۔ ون کی پیداواری صلاحیت 2 ہزار 160 میگاواٹ ہے۔ اِسی طرح 128 میگاواٹ پیداواری صلاحیت کے کیال خواڑ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے کنٹریکٹر نے بھی مشینری منصوبے کی سائٹ پر پہنچا نا شروع کر دی ہے، تاکہ اِس منصوبے پر بھی تعمیراتی کام کا آغاز کیا جاسکے ۔اِن منصوبوں کی تعمیر کی بدولت وفاقی حکومت کی ہدایت کے مطابق بجلی کے قومی نظام میں کم لاگت پن بجلی کا تناسب بہتر بنانے میں مدد ملے گی ۔چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل مزمل حسین(ریٹائرڈ) نے اِن خیالات کا اظہار آج داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ ، کیال خواڑ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ اور خان خواڑ ، الائی خواڑ اور دبیر خواڑ ہائیڈل پاور سٹیشن کے دورے کے موقع پر کیا ۔داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے دورے کے موقع پر چیئرمین واپڈا نے اِس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ پراجیکٹ ایریا میں انفراسٹرکچر کی تعمیر کے لئے پہلے سے ایوارڈ کئے گئے تین کنٹریکٹس کے تحت تعمیراتی کام شروع ہو چکا ہے ۔انفراسٹرکچر کی تعمیر میں 14 ارب 53 کروڑ 80 لاکھ روپے کی لاگت سے پراجیکٹ ایریا میں شاہراہِ قراقرم کی تعمیر ، 2 ارب 71 کروڑ 30 لاکھ روپے کی لاگت سے دریا کے دائیں کنارے سڑک کی تعمیر اور ایک ارب 58 کروڑ 30 لاکھ روپے کی لاگت سے دبیر ہائیڈل پاور سٹیشن سے داسو تک 132کلو وولٹ ترسیلی لائن کی تعمیر شامل ہیں ۔ چیئرمین واپڈا نے پراجیکٹ انتظامیہ پر زور دیا کہ وہ انفراسٹرکچر کی تعمیر سے متعلق کاموں کو مقررہ وقت میں مکمل کریں۔ اُنہوں نے مزید ہدایت کی کہ داسو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی تعمیر کے لئے بقیہ زمین کی خریداری کے عمل میں تیزی لانے کے لئے مقامی لوگوں ، ضلعی اور صوبائی انتظامیہ سے مؤثر رابطہ برقرار رکھا جائے۔

چیئرمین واپڈا نے کہا کہ داسو میں لوگوں کی معاشرتی اور اقتصادی ترقی واپڈا کی ترجیح ہے ، جس کے تحت علاقے میں صحت کی سہولیات ، تعلیمی اداروں کے قیام اور آمدورفت کے لئے سڑکوں کے نظام میں بہتری توجہ کا مرکز رہے گی ۔ خان خواڑ ، الائی خواڑ اور دبیر خواڑہائیڈل پاور سٹیشن کے دورے کے دوران چیئرمین واپڈا کو بتایا گیا کہ تینوں پن بجلی گھراپنی تکمیل کے بعد سے اب تک قومی نظام کو 4 ارب 86کروڑ 10 لاکھ یونٹ بجلی مہیا کر چکے ہیں ۔

مزید :

کامرس -