اہم شاہراؤں سے کھجور کے درخت غائب ، کروڑوں روپے کھوہ کھاتے

اہم شاہراؤں سے کھجور کے درخت غائب ، کروڑوں روپے کھوہ کھاتے

  

 لاہور(اقبال بھٹی)پارکس اینڈ ہارٹیکلچراتھارٹی کی جانب سے شہر کی پانچ اہم شاہراؤں جوہر ٹاؤن بائی پاس روڈ ،خیابان جناح روڈ ایل ڈی اے ایونیو ون کی مین روڈ ،جوبلی ٹاؤن کی تین مین روڈز اور پنجاب یونیورسٹی لنک روڈپر کروڑوں روپے سے لگائے جانے والے کھجور کے درخت غائب ہو گئے ہیں ،جن میں جوہر ٹاؤن بائی پاس روڈ ،خیابان جناح روڈ ایل ڈی اے ایوینیو ون کی مین روڈ جوبلی تاؤن کی تین میں روڈز اور پنجاب یونیورسٹی لنک روڈ شامل ہیں ،ان سڑکوں کی گرین بیلٹ میں کھجور کے درخت لگائے گئے تھے ،جو اب کہیں بھی نظر نہیں آتے،تفصیلات کے مطابق شاہراؤں کی خوبصورتی کیلئے کھجور کے درخت لگائے گئے تھے۔ اس حوالے سے جب پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی کے افسران سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ کھجور کے درخت حکومت پنجاب کی خواہش پر شہر کی بڑی اور نئی بنائی گئی سڑوں پر لگائے گئے تھے مگر لگائے جانے کے کچھ ہی عرصہ بعد ان پودوں کی خوبصورتی برقرار نہ رہ سکی ان کی دیکھ بھال میں بھی کوئی کسر نہ چھوڑی گئی لیکن شاید موسمی اثرات کی وجہ سے یہ درخت زیادہ پھل پھو ل نہ سکے اور مرجھا گئے جس کی وجہ سے ان کو تلف کرنا پڑا ،حالانکہ ان درختوں کے لئے سپیشل مٹی لائی گئی تھی اور ان کی دیکھ بھال کے لئے تجربہ کار سٹاف رکھا گیا تھا جب ان سے پوچھا گیا کہ ان درختوں پر کتنی لاگت آئی تھی اس پر انہوں نے کہا کہ کل لاگت کا صحیح اندازہ نہیں شہر کی پانچ سڑکوں پر لاگت ایک کروڑ سے زیادہ تھی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -