کل مسالک علما فورم اور مجلس تحقیقات اسلامی کے زیر اہتمام ورکشاپ

کل مسالک علما فورم اور مجلس تحقیقات اسلامی کے زیر اہتمام ورکشاپ

  

لاہور( نمائندہ خصوصی) کل مسالک علما فورم اور مجلس تحقیقات اسلامی کے زیر اہتمام ایک تین روزہ تربیتی ورکشاپ کا اہتمام ہو گیا۔ اس ورکشاپ کا بنیادی مقصد یہ تھا کہ معاشرے میں موجود فرقہ وارانہ انتہاپسندی اور تشدد کے حل کے لیے علماے کرام ، سول سوسائٹی کے اراکین اور صحافیوں کو ایسی صلاحیتوں اور مہارتوں سے آراستہ کیا جائے، جن کے ذریعے وہ پر تشدد فرقہ وارانہ اختلافات اور فسادات کو کم کرنے اورروکنے کی کاوشوں کو مزید بہتر بنا سکیں۔ورکشاپ میں فیصل آباد، اسلام آباد، راولپنڈی اور لاہور سے مختلف مسالک کے علماے کرام، سول سوسائٹی کے فعال اراکین اورنامور صحافیوں نے بھرپور شرکت کی۔ آخر میں تمام شرکا نے ورکشاپ کی کامیابی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اس بات کا عزم کیا کہ وہ بین المسالک ہم آہنگی اور فرقہ وارانہ تشدد کو روکنے کے لیے کسی بھی ممکنہ تعاون سے گریز نہیں کریں گے۔ انھوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایسی مثبت اور بہترین تربیتی پروگراموں کے سلسلے کو مزید بڑھاوا دیا جائے، اور عوام کو امن محبت اور بھائی چارے کا پیغام دینے کے ان پروگرواموں کو نچھلی سطح پر فروغ دینے کی کوشش کی جائے۔پنجاب میں کل مسالک علما بورڈ کے صوبائی کوآرڈینیٹر مولانا عاصم مخدوم نے بین المسالک رواداری کے فروغ میں علماے کرام، سول سوسائٹی اور صحافیوں کو کردار کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اس عزم کا اظہار کیاکہ کل مسالک علما بورڈ بین المسالک اتحاد کے لیے کی جانی والی سرگرمیوں میں علماے کرام اور معاشرے کے دیگر سرکردہ افراد کے ساتھ ہر قسم کے ممکنہ تعاون کے لیے تیار ہے۔

۔اس کے ساتھ وہ صوبے بھر میں ایسی تعمیری سرگرمیوں کو فروغ دینا چاہتے ہیں، جن سے معاشرے میں امن، محبت، اخوت اور روادی کا کلچر پروان چڑھے۔پروگرام کے آخر میں تمام شرکا کے درمیان اسناد کو بھی تقسیم کیا گیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -