عاصمہ جہانگیر اور حامد گروپ کے وکلاء کے درمیان عدالت میں تلخ کلامی

عاصمہ جہانگیر اور حامد گروپ کے وکلاء کے درمیان عدالت میں تلخ کلامی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ بار کے انتخابات مینوئل طریقے سے کرانے کیخلاف درخواست کی سماعت کے دوران عاصمہ جہانگیر اور حامد گروپ کے وکلاء کے درمیان کمرہ عدالت میں تلخ کلامی ہو گئی، چیف جسٹس نے معاملہ رفعہ دفعہ کرادیا، عدالت نے ہائیکورٹ بار کے الیکشن بورڈ اور پاکستان بار کو کل معاونت کیلئے طلب کر لیا ہے ۔چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے صدارتی امیدوار خرم لطیف کھوسہ کی درخواست پر سماعت کی۔ عاصمہ جہانگیر گروپ کے صدارتی امیدوار رمضان چودھری اور دیگر وکلاء نے موقف اختیار کیا کہ بائیومیٹرک ووٹنگ سے دھاندلی کا خدشہ ہوتا ہے، پاکستان بار کونسل تمام وکلاء کی سپریم باڈی ہے، پاکستان بار کا نوٹیفکیشن تمام بار ایسوسی ایشنز پر لاگو ہوتا ہے، سینکڑوں وکلاء کی بائیومیٹرک سسٹم میں رجسٹریشن بھی نہیں ہو سکی، اس لئے انتخابات مینوئل طریقے سے ہی ہونے چا ہئیں، اس پر کمرہ عدالت میں موجود دونوں گروپوں کے وکلاء میں تلخ کلامی شروع ہوگئی۔ تاہم چیف جسٹس نے مداخلت کر کے معاملہ رفعہ دفعہ کرایا اور پاکستان بار کونسل اور الیکشن بورڈ کو طلب کرتے ہوئے سماعت آج21فروری تک ملتوی کر دی ۔

مزید :

علاقائی -