شر اور لونڈ قبائل کی لڑائی 18 جانیں لینے کے بعد صلح میں تبدیل

شر اور لونڈ قبائل کی لڑائی 18 جانیں لینے کے بعد صلح میں تبدیل

  

ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی میں شر اور لونڈ قبائل کے درمیان 8سال قبل موبائل فون چھیننے کے سبب 18انسانی قیمتی جانوں کا ضیاع ہونے اورکئی افرادزخمی ہونے کے بعد چلنے والا خونی تکرار علاقہ کے معززین کے جرگہ کرنے کے بعد ختم کرادیا جرگے میں 2500سو سے زائد دونوں برادری کے لوگوں اور علاقہ کی دیگر برادریوں کے لوگوں نے شرکت کی لوند برادری پر 13قتل ثابت ہونے کے (بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

جرم میں 1کروڑ73 لاکھ روپوں کی رقم کا جرمانہ عائد کیا گیا جبکہ شر برادری پر4قتل ثابت ہونے پر54لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا گیا تصفیہ کے بعد اگر دونوں قابائل نے ایک دوسرسے جھگڑا کرنے کی پہل کی تو اس برادری کو دس لاکھ روپے جرمانہ کی رقم ادا کرنا پڑے گی جرگے کا فتویٰ جاری ہونے کے بعد دونوں قابائل کے لوگ 8سال کے بعد خوشی میں ایک دوسرے کے ساتھ گلے لگ کرملے اور دونوں قبائل کے لوگوں نے آئندہ جھگڑا نہ کرنے کا عہد کیا.

خونی تکرار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -