لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خودکش حملے کی تحقیقات میں پیشرفت

لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خودکش حملے کی تحقیقات میں پیشرفت

  

کراچی (کرائم رپورٹر)لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر خودکش حملے کی تحقیقات میں اہم پیشرفت ہوئی ہے، تفتیشی حکام کا کہنا ہے کہ تانے بانے افغانستان سے ملتے ہیں جبکہ دہشت گردوں کا نیٹ ورک سندھ اور بلوچستان میں بھی موجود ہے۔تفصیلات کے مطابق سیہون میں لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر جمعرات کوہونیوالے ہولناک خودکش دھماکے کے نتیجے میں 85 سے زائد افراد جاں بحق اور 350 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔تفتشی حکام نے واقعے کی تحقیقات میں اہم پیشرفت کا دعوی کیا ہے، پولیس افسران کا کہنا ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج میں خودکش بمبار مزار کے باہر کھڑا نگرانی کرتے دیکھا گیا، حملہ آور کو افغانستان سے بھیجا گیا جبکہ دھماکے کیلئے لاجسٹک سپورٹ کالعدم تنظیم نے فراہم کی۔تفتیشی پولیس حکام نے مزید بتایا ہے کہ دہشت گردوں کا نیٹ ورک سندھ اور بلوچستان میں بھی موجود ہے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -