دہشتگردی کی حالیہ لہر کا مشترکہ طور پر جوانمردی سے مقابلہ کرنا ہوگا : حمایت اللہ مایار

دہشتگردی کی حالیہ لہر کا مشترکہ طور پر جوانمردی سے مقابلہ کرنا ہوگا : حمایت ...

  

 مردان (بیورورپورٹ)ضلع ناظم مردان حمایت اللہ مایار نے کہا ہے کہ دہشت گردی اور بد امنی سنگین مسئلہ ہے اور دہشت گردی کے حالیہ لہر سے نمٹنے کیلئے مل کر مشترکہ طور پر کام کرنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر میں موجودہ نازک حالات اور امن و امان کے سلسلے میں منعقدہ ایک اعلیٰ سطح اجلاس سے صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں اسسٹنٹ ڈپٹی کمشنر افسرخان، ڈی پی او مردان میاں سعید احمد ، تحصیل ناظم مردان ایوب خان، تحصیل ناظم کاٹلنگ مولانا امداد اللہ ، نائب ناظم جلال خان، تحصیل نائب ناظم مردان مشتاق سیماب ، اے ڈی لوکل گورنمنٹ فضل اللہ ، ای ڈی او فنانس مردان اور ٹی ایم اوز نے بھی شرکت کی۔ ڈی پی اومردا ن نے شرکاء کو موجودہ نازک صورتحال کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔ اور پولیس کی جانب سے سیکورٹی کے حوالے سے اقدامات اور نئے آنیوالے خطرات کے بارے میں آگاہ کیا۔ ضلع ناظم نے کہا کہ امن و امان کیلئے بلدیاتی نمائندوں کو اعتماد میں لینا ہوگا۔ کیونکہ بلدیاتی نمائندے ہر ایک محلے اور گاؤں میں موجود ہوتے ہیں۔ ان کی مدد سے موجودہ صورتحال کو بہتر بنایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے ڈی پی او مردان کو ہدایت کی کہ ہر تھانہ کی سطح پر بلدیاتی نمائندوں ، پولیس اور عوام کی مشترکہ کھلی کچہریوں کا انعقاد کیا جائے تاکہ امن و امان کی موجودہ صورتحال پر باہمی طور پر تبادلہ خیال کیا جائے اور انکو اعتماد میں لیکر اس مسئلے کا بہتر حل نکالا جاسکے۔ کیونکہ یہ ہم سب کی مشترکہ مسئلہ ہے۔ انہوں نے تحصیل ناظمین کو ہدایت کی کہ اپنے اپنے دفاتر کیلئے سیکورٹی کیمروں کی تنصیب اور سیکورٹی گارڈز کی تعیناتی کیلئے پلان تیار کرکے اپنے بجٹ سے پی سی ون تیار کریں تاکہ دہشت گردی کے حالیہ لہر پر قابو پایا جاسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -