صحت انصاف کارڈ سکیم ،تدریسی ہسپتالوں میں مفت علاج کی فراہمی کا عمل شروع

صحت انصاف کارڈ سکیم ،تدریسی ہسپتالوں میں مفت علاج کی فراہمی کا عمل شروع

  

پشاور( سٹاف رپورٹر )خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر برائے صحت شہرام خان تراکئی کی خصوصی ہدایات کی روشنی میں صوبے کے بڑے خود مختار تدریسی ہسپتالوں میں صحت انصاف کارڈ سکیم کے تحت مریضوں کو علاج معالجے کی مفت سہولیات کی فراہمی کا عمل شروع کر دیا گیا۔ صوبے کے نامزد کردہ دیگر طبی و سرکاری ہسپتالوں میں پہلے ہی سے شروع کر دی گئی ہے ان تدریسی ہسپتالوں میں اس سہولت کے اجراء کے ابتدائی دو دنوں میں مجموعی طور پر22مریضوں کو داخل کر کے ان کا علاج شروع کر دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ دو دنوں میں لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور میں نو،خیبر ٹیچنگ ہسپتال پشاور میں سات اور ایوب ٹیچنگ ہسپتال ایبٹ آباد میں چھ مریضوں کو مفت علاج کے لئے داخل کیا گیا ہے جن میں زیادہ تر آرتھوپیڈک،نیورولوجی،یورالوجی،گائنی اور ای این ٹی کے کیسز شامل ہیں۔اگرچہ حیات آباد میڈیکل کمپلیکس پشاور میں بھی اس سہولت کا اجراء کر دیا گیا ہے تاہم ابھی وہاں پر کوئی مریض داخل نہیں ہوا۔ان ہسپتالوں میں صحت انصاف کارڈ کے ذریعے علاج معالجے کی مفت سہولیات کے حصول کے لئے آنے والے مریضوں کی سہولت اور رہنمائی کے لئے دو الگ الگ کاؤنٹرز قائم کئے گئے ہیں۔یاد رہے کہ ان ہسپتالوں میں اس سہولت کے ا جراء میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے صوبائی وزیر صحت نے گزشتہ دنوں متعلقہ حکام کا ایک ہنگامی اجلاس بلا کر اس سکیم کے تحت مریضوں کو مفت علاج کی فراہمی کا عمل فوری طور پر شروع کرنے کی ہدایت کی تھی۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -