دینی مدارس کی آڑ میں کارروائیون کیخلاف اسلام پسندوں کا سب سے بڑا احتجاج ہو گا : عبد الغفورحیدری

دینی مدارس کی آڑ میں کارروائیون کیخلاف اسلام پسندوں کا سب سے بڑا احتجاج ہو ...

  

 تخت بھائی (نا مہ نگا ر) سینٹ کے ڈپٹی چیئرمین اور جے یو آئی کے مرکزی جنرل سیکرٹری مولانا عبدالغفور حیدری نے واضح کیا ہے کہ علمائے کرام اور دینی مدارس اسلامی علوم کا سر چشمہ اور معاشرے میں اتحاد و اتفاق اور یکجہتی کی علامت ہے اور دھشت گردی کے خلاف کاروائیوں کی آڑ میں دینی مدارس کو نشانہ بنانا نظر یہ پاکستان پر اسلام پسندوں کا سب سے بڑا احتجاج ہوگا۔ وہ دارالعلوم اسلامیہ جمہوریہ تخت بھائی میں ممتاز عالم دین شیخ الحدیث مولانا شیر اسلم خان مرحوم کی کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے جس سے جے یو آئی کے صوبائی جنرل سیکٹری مولانا شجاع الملک ، ضلع مردان کے امیر مولانا محمد قاسم ، صوبائی آفس سیکٹری علامہ محمد صدیق ، صفدر صافی ، مولانا عطاء للہ حقانی اور مولانا اشتیاق احمد حقانی نے بھی اظہار خیال کرتے ہوئے مولانا شیر اسلم خان مرحوم کی دینی ، علمی اور سیاسی خدمات کو سر اہا ، مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ عدم برداشت کی سیاست اور نوجوان نسل کو سو شل میڈیا کے ذریعے دھشت گرد بنا رہی ہیں اور جے یو آئی نے ہر نازک دور میں اسلام اور مذہبی اقدار سمیت ملک کے خلاف تمام سازشوں کو ناکام بنایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک آزادی سے لے کر استحکام پاکستان اور اسلامی ترقی کے نفاذ و سربلندی کیلئے جمعیت کا کردار ہمیشہ مثالی رہا ہے جبکہ سیکولر قوتوں کے سیلاب کوروکنے کیلئے ہم دیوار بن کر کھڑے ہیں انہوں نے کہا کہ اسٹیبلش نے ہمیشہ جے یو آئی کو دیوارسے لگانے کی کوشش کی ہے تاہم 2018ء کے انتخابات میں اس سازش کو ہر قیمت پر ناکام بنایا جائیگا ۔ اس موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں کے درجنوں کارکنان نے مستعفی ہوکر جے یو آئی میں شمولیت کا اعلان کیا جنہیں جے یو آئی کی ٹوپیاں پہنائیں گئیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -