ٹی ایم اے کوھاٹ کے افسران سلاٹر ہاؤس کی صفائی کرنے میں ناکام

ٹی ایم اے کوھاٹ کے افسران سلاٹر ہاؤس کی صفائی کرنے میں ناکام

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ٹی ایم اے کوھاٹ کے افسران سلاٹر ہاؤس کی صفائی کرنے میں ناکام‘ گندگی کے ڈھیروں اور جانوروں کی آلائشوں کی وجہ سے علاقہ میں نقص پھیلنے سے شہری پریشانی‘ ٹی ایم اے کی خراب مشینری کی وجہ سے گزشتہ کئی ہفتوں سے گندگی کے ڈھیر نہیں اٹھائے جا سکے عوام مضر صحت گوشت کھانے پر مجبور تفصیلات کے مطابق کوھاٹ شہر کے اکلوتے سلاٹر ہاؤس کے باہر گزشتہ کئی ہفتوں سے پڑے گندگی کے ڈھیروں اور جانوروں کی آلائشوں سمیت ڈھیر پر بڑے مردہ جانوروں کی وجہ سے اردگرد کی آبادی کے مکین سخت تکلیف کا شکار ہیں شہر میں صفائی کی ذمہ داری WSSC کے حوالے کی گئی ہے مگر سلاٹر ہاؤس کی صفائی کی ذمہ داری ٹی ایم اے کوھاٹ کی ہے جو حسب روایت اپنی ذمہ داری نبھانے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتی ہے اور ٹی ایم اے افسران اور تحصیل انتظامیہ کی نالائقی اور نااہلی کی وجہ سے عوام مشکلات کا شکار ہیں کمیٹی ذرائع نے انقلاب کوھاٹ کو بتایا کہ کمیٹی کے پاس جو مشینری موجود ہے وہ خراب حالت میں کھڑی ہے مگر تحصیل ناظم اور ٹی ایم او کو ان گاڑیوں کی مرمت میں کوئی دلچسپی نہیں جس کی وجہ سے کئی ہفتوں سے پڑے گندگی کے ڈھیر نہیں اٹھائے جا سکے اور عوام کو مضر صحت گوشت سپلائی کیا جا رہا ہے شہریوں نے ڈپٹی کمشنر کوھاٹ سمیت منتخب ممبران اسمبلی سے بھی مطالبہ کیا ہے کہ وہ سلاٹر ہاؤس کے باہر پڑے مردہ جانوروں اور گندگی کے ڈھیروں کو فوری طور پر ٹھکانے لگانے کے لیے ٹی ایم او کوھاٹ کو ہدایت جاری کریں اور اتنی سنگین نااہلی کا مظاہرہ کرنے پر ٹی ایم او کوھاٹ سے جواب طلبی بھی کی جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -