حملہ آوروں کی تعداد 3 تھی، ایک نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، 2 کو پولیس نے مار دیا: ڈی پی او سہیل خالد

حملہ آوروں کی تعداد 3 تھی، ایک نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، 2 کو پولیس نے مار ...
حملہ آوروں کی تعداد 3 تھی، ایک نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، 2 کو پولیس نے مار دیا: ڈی پی او سہیل خالد

  

چارسدہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر (ڈی پی او) چارسدہ سہیل خالد نے کہا ہے کہ کچہری پر حملہ کرنے والے تینوں خودکش حملہ آوروں کو مار دیا گیا ہے اور ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

چار سدہ میں سیشن کورٹ کے گیٹ پر دھماکے کی خبر تفصیل سے پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

تفصیلات کے مطابق ڈی پی او چارسدہ سہیل خالد نے کہا کہ 3 خودکش حملہ آوروں نے کچہری پر حملہ کیا اور ایک خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑایا جس کے بعد باقی دو دہشت گردوں نے گرینیڈ پھینک کر اور فائرنگ کر کے کچہری میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم سیکیورٹی فورسز نے بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے انہیں اندر جانے سے روکا اور دونوں دہشت گردوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔

چارسدہ دھماکے،ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی،وزیرصحت شہرام ترکئی

ڈی پی او سہیل خالد کے سیکیورٹی فورسز نے بڑے نقصان سے بچا لیا ہے اور اس حملے میں 3 سے 4 افراد شہید ہوئے ہیں جبکہ  5 سے 6 افراد افراد زخمی ہوئے ہیں جنہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے اور ریسکیو آپریشن جاری ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن بھی شروع کر دیا ہے۔

مزید :

چارسدہ -