پولیس نے 20 سالہ لڑکی 11 سالہ بہرے کے ساتھ ’ونی‘ ناکام بنادی

پولیس نے 20 سالہ لڑکی 11 سالہ بہرے کے ساتھ ’ونی‘ ناکام بنادی
پولیس نے 20 سالہ لڑکی 11 سالہ بہرے کے ساتھ ’ونی‘ ناکام بنادی

  

ڈیرہ غازی خان(ویب ڈیسک) نوجوان کو پسند کی شادی کی بھاری قیمت چکانا پڑی اور لغاری گروپ کے کونسلر کی سربراہی میں ہونیوالی نام نہاد پنچایت نے دولہا کو ڈیڑھ لاکھ روپے تاوان اور 20 سالہ بہن ونی کرنے کا حکم دیا، عمل نہ کرنے کی صورت مزید 10 لاکھ ہرجانہ طے کردیاتاہم خوشی قسمتی سے پولیس نے نکاح و رخصتی رکوادی جبکہ کونسلر و دیگر کو گرفتار کر لیا لیکن بعدازاں اس شرمناک دھندے کی پشت پناہی کرنیوالے یم پی اے کی مداخلت پر رہا کر دیا۔

مقامی اخبارکے ذرائع کے مطابق حدود تھانہ کوٹ چھٹہ موضع کوٹلہ غلام کی بستی رندوالا کے رہائشی نبی بخش میرانی کے بیٹے محمد طارق میرانی نے احمد بخش میرانی کی بیٹی ثمینہ بی بی سے پسند کی شادی کر لی جس پر لغاری گروپ کے کونسلر قاری شاہ نواز میرانی کی سربراہی میں غلام نبی میرانی ، عطا محمد ، اللہ وسایا ، غلام رسول اوردیگرنے پنچایت میں ددلہا کے والد پر ڈیڑھ لاکھ روپے چٹی رکھتے ہوئے احمد بخش میرانی کے بیٹے شاہد میرانی 11 سالہ ، جو کہ سماعت سے بھی محروم ہے کے ساتھ دولہا طارق میرانی کی 20 سالہ بہن شازیہ بی بی کو ونی کرنے کا حکم سنا دیا۔

صرف یہی نہیں بلکہ فیصلے پر عمل نہ کرنے کی صورت میں مزید 10 لاکھ چٹی کی تحریر لکھوالی اورا سٹامپ پیپر پر انگوٹھے لگوالیے گئے ۔15 پر کال کے بعد ڈی ایس کوٹ چھٹہ پولیس کو کارروائی کا حکم دیا اورکوٹ چھٹہ پولیس کے موقع پر پہنچنے پر پنچایتی فرار ہونے لگے تاہم قاری شاہنواز سمیت دیگر ہتھے چڑھ گئے اور پولیس نے نکاح اور رخصتی رکوادی۔

بعدازاں ایم پی اے کی مداخلت پر پنچایتوں کو چھوڑ دیا گیا اور منگنی کی رسم پوری کر لی گئی۔

مزید :

ڈیرہ غازی خان -