اگر اسلام آباد کیخلاف میچ کے دوران گراﺅنڈ میں ہوتا توشاید ہارٹ اٹیک کے بعدہسپتال پہنچ چکا ہوتا: رانا فواد

اگر اسلام آباد کیخلاف میچ کے دوران گراﺅنڈ میں ہوتا توشاید ہارٹ اٹیک کے ...
اگر اسلام آباد کیخلاف میچ کے دوران گراﺅنڈ میں ہوتا توشاید ہارٹ اٹیک کے بعدہسپتال پہنچ چکا ہوتا: رانا فواد

  

مسقط(ڈیلی پاکستان آن لائن)پی ایس ایل ٹیم لاہور قلندرز کے مالک رانا فواد نے کہا ہے کہ اگر میں اسلام آباد کیخلاف میچ کے دوران گراﺅنڈ میں ہوتا توشاید ہارٹ اٹیک کے بعد ایمبولینس کے ذریعے ہسپتال پہنچ چکا ہوتا۔

نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے لاہور قلندرز ٹیم کے مالک رانا فواد نے کہا ہے کہ رات کو میچ دیکھ کر میرا بہت برا حال تھا،ہر بال ،ہر شاٹ پر دل دھڑکن تیز ہوجاتی تھی،شکر ہے کہ ہم جیت گئے،میں گراﺅنڈ میں بیٹھ کر سکون سے میچ دیکھنا چاہتا ہوں لیکن کیمرے والے مجھے دیکھنے نہیں دیتے اس لیے مسقط آیا ہوں،اگر میں کل میچ کے دوران گراﺅنڈ میں ہوتا توشاید ہارٹ اٹیک کے بعد ایمبولینس کے ذریعے ہسپتال پہنچ چکا ہوتا،میں لاہوریا ہوں لاہوریے خوشی پر مسکراتے ہیں اور غم پر روتے بھی ہیں۔

”پنج دی قلفی، دس دی۔۔۔“ شارجہ سٹیڈیم پنجابی نعرے سے گونج اٹھا، یاسر شاہ کے نام پر شائقین نے ایسے نعرے لگانے شروع کر دئیے کہ کھلاڑیوں کا ہنسی سے برا حال ہو گیاانہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا ہے کہ کرکٹ انٹرٹینمنٹ ہے اسے کھیل سمجھ کر ہی انجوائے کرنا چاہیے،لاہور میں پی ایس ایل ٹو کا فائنل ہونا خوش آئند ہے اس سے کے انعقاد سے ملک میں کرکٹ گراﺅنڈز آباد ہوں گے۔

واضح رہے اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف لاہور قلندرز نے اپنا میچ آخری وکٹ پر چھکا لگا کر جیتا تھا۔

مزید :

T20 World cup -