سعودی عرب میں پہلی مرتبہ لڑکے لڑکیوں نے مل کر وہ کام کر دیا جس کی آج سے پہلے کبھی اجازت نہ دی گئی، پوری دنیا دنگ رہ گئی

سعودی عرب میں پہلی مرتبہ لڑکے لڑکیوں نے مل کر وہ کام کر دیا جس کی آج سے پہلے ...
سعودی عرب میں پہلی مرتبہ لڑکے لڑکیوں نے مل کر وہ کام کر دیا جس کی آج سے پہلے کبھی اجازت نہ دی گئی، پوری دنیا دنگ رہ گئی

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں لڑکے لڑکیوں کے مخلوط فیسٹیول آج تک شجرممنوعہ تھے لیکن اب جدہ میں ایک ایسا فیسٹیول منایا گیا ہے کہ دنیا دنگ رہ گئی۔ سی این این کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں پہلی بار جدہ شہر میں 3روزہ کومک کون فیسٹیول کا انعقاد کیا گیا جس میں مردوخواتین نے بھرپور شرکت کی۔ ملک میں اپنی نوعیت کا منفرد میلہ پہلی بار سجنے پر ان کی خوشی دیدنی تھی۔ اکثر نے اپنے چہروں پر مختلف قسم کے ماسک چڑھائے ہوئے تھے، کوئی سپائیڈر مین بنا ہوا تھا تو کسی اور کوئی اور روپ دھار رکھا تھا۔ ہر ایک اس میلے سے بھرپور طریقے سے لطف اندوز ہو رہا تھا۔

بھارتی فوجی کے بعد افغان فوجی اہلکار بھی میدان میں آگیا، کھانے کی ویڈیو جاری کردی

سی این این سے گفتگو کرتے ہوئے میلے میں شریک بیٹ گرل بنی فاطمہ محمد حسین نامی لڑکی کا کہنا تھا کہ ”جس لمحے میں اس خیمے میں داخل ہوئی میری آنکھیں حیرت سے پھٹی کی پھٹی رہ گئیں۔ مجھے یقین ہی نہیں ہو رہا تھا کہ اس طرح کا فیسٹیول ہمارے ہاں بھی ہو سکتا ہے۔ سعودی عرب نے یہ بہت بڑا اور اہم اقدام اٹھایا ہے۔“میلے میں سپائیڈرمین کا روپ دھارے 25سالہ عبدالرحمن بخش کا کہنا تھا کہ ”جب میں خیمے میں داخل ہوا تو میں بھول گیا کہ میں سعودی عرب میں موجود ہوں۔اس میلے میں شہریوں نے بھرپور شرکت کی ہے اور اپنی تخلیقی صلاحیتوں کا اظہار کیا ہے۔“

مزید :

عرب دنیا -