چیئرمین پیمرا کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری

چیئرمین پیمرا کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری
چیئرمین پیمرا کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین پیمرا ابصار عالم کی تعیناتی کے خلاف درخواست پر وفاقی حکومت کو جواب داخل کرانے کے لئے دوبارہ نوٹسز جاری کردیئے ہیں۔

لیگی ایم این اے عبدالرحمن کانجو نے اصل نام تک چھپایا ،بینکوں کا نادہندہ ہے ،شہری نااہلی کے لئے ہائی کورٹ پہنچ گیا

جسٹس جواد حسن نے شہری منیر احمد کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ ابصار عالم کو میرٹ سے ہٹ کر چیئرمین پیمرا تعینات کیا گیا ہے، حکومت نے جب چیئرمین پیمرا کیلئے تعیناتی کا اشتہار جاری کیا تو حکومت کو اندازہ ہوا کہ ابصار عالم اس اشتہار پر پورا نہیں اترتے، ابصار عالم کو نوازنے کیلئے حکومت نے اشتہار ہی تبدیل کر دیا، ابصار عالم متعلقہ تجربہ اور تعلیمی قابلیت نہیں رکھتے لہذا چیئرمین پیمرا ابصار عالم کو عہدے سے ہٹانے کا حکم دیا جائے اور پیمرا کی طرف سے پرائیویٹ کا وکیل پیش ہونا بھی غیرقانونی قرار دیا جائے، سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اس درخواست میں ابھی تک متعلقہ وزارت کی طرف سے جواب جمع نہیں کرایا گیا، جس پر عدالت نے وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے دس مارچ تک جواب طلب کر لیا، عدالت نے پیمرا کی طرف سے پرائیویٹ وکیل کی خدمات لینے پر بھی وضاحت طلب کی ہے

مزید :

لاہور -