عدالت کی دھمکی کام کرگئی ،ڈی سی لاہو ر نے ایک گھنٹہ میں سٹاف افسر کے تبادلہ کا نوٹیفکیشن جاری کردیا

عدالت کی دھمکی کام کرگئی ،ڈی سی لاہو ر نے ایک گھنٹہ میں سٹاف افسر کے تبادلہ کا ...
عدالت کی دھمکی کام کرگئی ،ڈی سی لاہو ر نے ایک گھنٹہ میں سٹاف افسر کے تبادلہ کا نوٹیفکیشن جاری کردیا

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے عرصہ دراز سے غیرقانونی طور پر تعینات ڈپٹی کمشنر لاہور کے سٹاف افسر طارق زمان کو عہدے سے ہٹانے کا حکم دے دیا،فاضل جج کے حکم پر ڈپٹی کمشنر نے ایک گھنٹے کے اندر اندر طارق زمان کو واپس محکمہ ماحولیات بھجوانے کا نوٹیفکیشن عدالت میں پیش کر دیا، جسٹس شاہد وحید نے شہری محمد ابراہیم کی درخواست پر سماعت کی.

ہاکی کے سابق اولمپئن عرفان محمود 22سال سے ترقی کے منتظر،ہائی کورٹ نے پی آئی اے سے جواب طلب کرلیا

درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ لاہور ہائیکورٹ نے تین برس قبل 2014ءمیں طارق زمان کو سٹاف افسر کے عہدے سے ہٹانے کا حکم دیا تھا، طارق زمان پی سی ایس یا سی ایس ایس افسر نہیں ہیں، قانون کے مطابق ضلعی انتظامیہ میں سٹاف افسر کے عہدے پر پی سی ایس یا سی ایس ایس کا افسر تعینات ہو سکتا ہے لیکن طارق زمان عام سرکاری ملازم ہیں اور محکمہ ماحولیات میں تعینات ہیں لہذا عدالتی حکم پر عملدرآمد کرنے اور طارق زمان کو سٹاف افسر کے عہدے سے ہٹانے کا حکم دیا جائے، عدالت کے فوری طلب کرنے پر ڈپٹی کمشنر سمیر سید پیش ہوئے، عدالت نے تین برس سے عدالتی فیصلے پر عملدرآمد نہ کرنے پر ڈپٹی کمشنر کی سخت سرزنش کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ پنجاب کے افسروں نے عدالتی احکامات نظرانداز کرنا وطیرہ بنا رکھا ہے، تین برس گزر گئے لیکن پنجاب حکومت نے مجرمانہ خاموشی اختیار کئے رکھی، عدالت نے ڈپٹی کمشنر کو حکم دیا کہ سٹاف افسر طارق زمان کو عہدے سے ہٹا کر واپس محکمہ ماحولیات بھجوانے کا فوری نوٹیفکیشن عدالت میں پیش کیا جائے ورنہ ڈپٹی کمشنر کو نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا، عدالتی وقفے کے بعد ایک بجے ڈپٹی کمشنر سمیر سید عدالت میں پیش ہوئے اور سٹاف افسر طارق زمان کو عہدے سے ہٹانے اور واپس محکمہ ماحولیات بھجوانے کا نوٹیفکیشن پیش کر دیا، جس پر عدالت نے ڈپٹی کمشنر کو مستقبل میں محتاط رہنے کی وارننگ دیتے ہوئے توہین عدالت کی درخواست نمٹا دی۔

مزید :

لاہور -