سالانہ سہ روزہ نظریہ پاکستان کانفرنس آج شروع ہو گی

سالانہ سہ روزہ نظریہ پاکستان کانفرنس آج شروع ہو گی

  

لاہور (پ ر) نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے زیراہتمام گیارہویں سالانہ سہ روزہ نظریۂ پاکستان کانفرنس کا آغاز آج جمعرات21 فروری سے ایوانِ کارکنانِ تحریکِ پاکستان‘لاہور میں ہو رہا ہے۔ اس کانفرنس میں کارکنان تحریک پاکستان،اندرون و بیرون ملک سے نظریۂ پاکستان فورمز کے عہدیداران و کارکنان سمیت مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے خواتین وحضرات کے نمائندہ وفود بالخصوص اساتذۂ کرام شرکت کریں گے۔ تحریک پاکستان کے مخلص کارکن‘ سابق صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان و چیئرمین نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کی زیر صدارت قومی یکجہتی کی مظہریہ کانفرنس ہفتہ23فروری 2019ء تک جاری رہے گی۔ اس کانفرنس کا کلیدی موضوع ’’ریاست مدینہ۔ نشان منزل‘‘ ہے۔ کانفرنس کی افتتاحی نشست آج 09:30بجے صبح ہوگی جس میں محمد رفیق تارڑ کارکنانِ تحریکِ پاکستان (گولڈ میڈلسٹس ) کے ہمراہ پرچم کشائی کی رسم ادا کریں گے۔ بعد ازاں وائیں ہال میں شرکاء قومی عہد کی تجدید کریں گے۔ اِفتتاحی نشست کے دوران نظرےۂ پاکستان ٹرسٹ کے وائس چےئرمین پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد کانفرنس کی غرض و غایت جبکہ میاں فاروق الطاف خیرمقدمی کلمات ادا کریں، کلیدی خطاب سینیٹر ولید اقبال کریں گے۔ کانفرنس کی دوسری نشست میں سیکرٹری نظریۂ پاکستان ٹرسٹ شاہد رشید کارکردگی رپورٹ بھی پیش کریں گے ۔نظریۂ پاکستان کانفرنس کے دوران مختلف موضوعات پر 9نشستیں منعقد ہوں گی جن میں تحریک پاکستان کے کارکنان، اہم سیاسی و مذہبی رہنما،ممتاز دانشور،قانون دان اور ماہرین تعلیم خطاب کریں گے۔ کانفرنس میں18 موضوعاتی گروہی مباحثے بھی منعقد ہوں گے جس کے چیف کوآرڈی نیٹر نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے وائس چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد ہوں گے جبکہ معاونین کے فرائض پروفیسر ڈاکٹر پروین خان‘ بیگم صفیہ اسحاق‘ غزالہ شاہین وائیں‘ عارفہ صبح خان اور نائلہ عمر ادا کریں گی۔ گروپ نمبر 1 کا موضوع’ ’نوجوانوں میں بامقصد تعلیم کے حصول کا رجحان پیدا کرنے کی ضرورت و اہمیت‘‘ گروپ نمبر2کا موضوع’’نئی نسلوں میں احساس تفاخر کیسے پیدا کیا جائے؟‘‘ گروپ نمبر3کا موضوع’’یکساں نصاب اور نظام تعلیم کیسے ممکن ہے؟‘‘ گروپ نمبر4کا موضوع ’’دہشت گردی کے خاتمے کیلئے حکومت اور عوام کا باہمی تعاون ضروری ہے‘‘ گروپ نمبر5کا موضوع’’جمہوریت میں انسانی حقوق کا تحفظ ضروری ہے‘‘گروپ نمبر6کا موضوع ’’عالمی سطح پر پاکستان کے بارے میں مثبت پراپیگنڈہ کیسے ممکن ہے؟‘‘گروپ نمبر7کا موضوع ’’خواتین کا سیاسی اور سماجی معاملات میں حصہ لینا ضروری ہے‘‘ گروپ نمبر8کا موضوع ’’دفاع پاکستان کی بنیاد دفاعی ٹیکنالوجی میں خود انحصاری ‘‘ گروپ نمبر9کا موضوع ’’بھارتی مخاصمت کا مقابلہ کیسے کیا جائے؟‘‘ گروپ نمبر10کا موضوع ’’تعلیمی اداروں میں سماجی برائیوں سے آگاہی ضروری ہے‘‘ گروپ نمبر11کا موضوع’ ’معاشرے میں پھیلی کرپشن کے سدباب کے تقاضے‘‘ گروپ نمبر 12کا موضوع ’’دنیا کی تیسری بڑی زبان اردو کا عملی نفاذ کیسے ممکن ہے؟‘‘ گروپ نمبر 13کا موضوع ’قوم کی کردار سازی میں سیاسی جماعتوں کا کردار‘‘ گروپ نمبر 14کا موضوع ’’ بھارتی دریائی دہشت گردی اور اس کا سدباب‘‘ اور گروپ نمبر 15کا موضوع ’’پرنٹ اورالیکٹرانک ذرائع ابلاغ، پسمنظر اور اثرات ونتائج ‘‘ گروپ نمبر 16کا موضوع ’’ پاکستان کے مسائل کے حل میں اہل علم و دانش کا کردار‘‘ گروپ نمبر 17کا موضوع ’’مضبوط معیشت۔ناقابل تسخیر پاکستان کی ضمانت‘‘ اور گروپ نمبر 18کا موضوع ’’ نوجوانوں کی کردار سازی نظریاتی بنیادوں پر ہونی چاہئے ‘‘ ہوگا۔ کانفرنس کے پہلے دن سہ پہر اڑھائی بجے چوتھی نشست کے علماء ومشائخ سیشن سے ممتاز علماء ومشائخ خطاب کریں گے۔کانفرنس کے دوسرے دن جمعہ 22فروری کو منعقدہ پانچویں اور چھٹی نشست سے معروف سیاسی وسماجی رہنما اوراہل علم ودانش خطاب کریں گے۔ ساتویں نشست ’’کشمیر سیشن ‘‘کے عنوان سے منعقد ہو گی جس میں ممتاز کشمیری رہنما و دیگر فاضل مقررین خطاب کریں گے۔ کانفرنس کے تیسرے دن 23فروری کوآٹھویں نشست سے ممتاز دانشور اور ماہرین تعلیم خطاب کریں گے جبکہ اختتامی نشست میں گروہی مباحثوں کی سفارشات اور آئندہ لائحہ عمل کیلئے تجاویز پیش کی جائیں گی۔آخر میں کانفرنس کا اعلامیہ اور شرکائے کانفرنس کی منظوری کیلئے قراردادیں پیش کی جائیں گی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -