علم سے پاکستان اور عالم اسلام کا خوشحال و محفوظ مستقبل وابستہ ہے، حسین محی الدین

علم سے پاکستان اور عالم اسلام کا خوشحال و محفوظ مستقبل وابستہ ہے، حسین محی ...

  

لاہور(پ ر) منہاج القرآن انٹر نیشنل کے صدر ڈاکٹر حسین محی الدین قادری نے کالج آف شریعہ اینڈ اسلامک سائنسز کے زیر اہتمام منعقدہ قائد ڈے کی تقریب میں شریک سینکڑوں طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ علم سے پاکستان اور عالم اسلام کا خوشحال اور محفوظ مستقبل وابستہ ہے ۔طالب علم کتاب سے محبت اور دوستی کا رشتہ استوار کریں، ڈاکٹر طاہر القادری دنیا میں جہاں کہیں بھی گئے انھوں نے صرف کتابوں کی شاپنگ کی ان کی زندگی کتاب سے جڑی ہوئی ہے، انھوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ تعلیم اور عبادت دو ایسے جوہر ہیں جو انسان کو عملاً اشرف المخلوقات کے مقام پر بٹھاتے ہیں، استاد کا اخلاص سے طلباء کو تعلیم دینا اور طلبا کا اسی اخلاص سے علم حاصل کرنا عبادت ہے،کوئی کالم نویس، رائٹر اپنی قوم، انسانیت کی بہتری کیلئے لکھتا ہے تو یہ اس کی عبادت ہے، کوئی وکیل فیس لیکر مقدمہ لڑنے کا حق ادا کر ے اور جج صرف انصاف کو اپنی پہلی ترجیح بنا لے تو یہ ان کی عبادت ہو گی۔عالم ربانی کا رات بھر سونا جاہل زاہد کی رات بھر کی عبادت سے افضل ہے، کالج آف شریعہ اینڈ اسلامک سائنسز کی تقریب میں سینئر صحافی عامر خاکوانی، خرم نواز گنڈا پورودیگر نے شرکت کی۔

تقریب کے اختتام پر کالج آف شریعہ کے اساتذہ اور طلباء نے شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کی 68 ویں سالگرہ پر کیک کاٹا اور ان کی درازی عمر کی دعا کی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سینئر صحافی عامر خاکوانی نے کہا کہ منہاج القرآن کے تعلیمی اداروں سے وابستہ طالب علم خوش قسمت ہیں جنھیں ڈاکٹر طاہر القادری کی فکری سرپرستی حاصل ہے اور ان طالب علموں کو فی زمانہ کتاب سے دوستی کرنے کی ترغیب دی جاتی ہے۔ڈاکٹر طاہر القادری ایک ہمہ جہت شخصیت ہیں ان کے سیاسی کردار کی وجہ سے ان کا اصل علمی کام پوری طرح سامنے نہیں آیا، ڈاکٹر طاہر القادری کا قرآنی انسائیکلو پیڈیا ایک بہت بڑی تالیف ہے مجھے اس بات کی خوشگوار حیرت ہوتی ہے کہ اتنا بڑا کام ایک تنہا شخص نے کیا حالانکہ ایسے کام ادارے اور بہت ساری شخصیات مل کر کرتی ہیں۔یہ اللہ کا ڈاکٹر طاہر القادری پر خاص فضل ہے، ڈاکٹر طاہر القادری کی تعلیمات، تالیفات میں اعتدال ہے جس کی آج پاکستانی سوسائٹی کو سب سے زیادہ ضرورت ہے، ڈاکٹر طاہر القادری اپنی اعتدال پسند فکر کے باعث ہر مسلک اور طبقہ فکر میں محترم اور قابل عزت ہیں، موجودہ ملحدانہ اور تکفیری فکر کی یلغار کے پرفتن دور میں ڈاکٹر طاہر القادری کی کتابیں، خطابات اور فکر بہت بڑی نعمت ہیں،ڈاکٹر طاہر القادری نے منہاج یونیورسٹی اور کالج آف شریعہ اینڈ اسلامک سائنسز اور عالمگیر اسلامک سنٹرز کی شکل میں اہل پاکستان اور انسانیت کو بے مثال اداروں کا تحفہ دیا، ڈاکٹر طاہر القادری کے ہتھیار علم کتاب اور دلیل ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -