کامسیٹس یونیورسٹی، میتھ ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام بین الاقوامی کانفرنس

کامسیٹس یونیورسٹی، میتھ ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام بین الاقوامی کانفرنس

  

لاہور( لیڈی رپورٹر )کامسیٹس یونیورسٹی لاہور کیمپس میں میتھ ڈیپارٹمنٹ کے زیر اہتمام دوسری بی الاقوامی کانفرنس(ICRAAM) کا انعقاد کیا گیا۔ اس کانفرنس کے مہمان خصوصی وزیر برائے اعلیٰ تعلیم راجہ یاسر سرفراز ہمایوں سرفراز تھے۔ شرکاء سے خطاب میں صوبائی وزیر کاکہنا تھا کہ اعلیٰ تعلیم کا تعلق تحقیق سے ہے، معیاری تحقیق کے بغیر ڈگری کا کوئی فائدہ نہیں۔تحریک انصاف کی حکومت ملک میں تحقیق کے کلچر کو فروغ دے رہی ہے۔ سائنسی میدان میں ترکی سے ہی صنعتی ترکی حاصل کی جا سکتی ہے۔ صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن نے کہا کہ کوشش کر رہے ہیں ان مضامین میں تحقیق کو فروغ دیں جو پاکستانی صنعت کے لئے فائدہ مند ہو۔

تعلیم اور تحقیق کے معیار میں بہتری کے لئے اقدامات کر رہے ہیں، جدید ٹیکنالوجی کے حصول ہماری معاشی ترقی کے لئے بہت ضروری ہے۔راجہ یاسر نے کامسیٹس یونیورسٹی کی ریسرچ کے شعبہ میں غیر معمولی کارکردگی پر ادارے کے سربراہوں کو خراج تحسین پیش کیا۔ یہ کانفرنس تین دن تک جاری رہے گی جس میں متعدد ممالک کیسکالرز نے شرکت کی جن میں ایران۔ ترکی، چائنہ، انگلینڈ اور امریکہ قابل زکر ہیں۔ خطبہ استقبالیہ دیتے ہوئے پروفیسر ڈایکٹر ارشد، ڈین سائنسز نے کامسیٹس کی ملکی اور بین الاقوامی سطح پر امتیازی حیثیت کے پیچھے کار فرما عوامل پر روشنی ڈالی۔ اس کانفرنس کے منتظم اور شعبہ ریاضی کے سربراہ ڈاکٹر سرفراز نے تمام بین الاقوامی مہمانوں کی آمد پرشکریہ ادا کیا۔ آخر میں لاہور کیمپس کے ڈائریکٹر اور تمام سرگرمیوں کی سر پرستی کرنے والے پروفیسر ڈایکٹر قیصر عباس نے منسٹر صاحب، کانفرنس کے منتظمین، معزز مہمان سکالرز کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے فہیم جہانزیب صاحب اور میڈیا کا بھی شکریہ ادا کیا۔ تقریب کا اختتام مہمانوں کو اعزازی شیلڈ دے کر کیا گیا۔ بطور وزیر سیاحت، راجہ یاسر ہمایوں نے معززغیر ملکی مہمانوں کو شہر میں ڈبل ڈیکر بس پر سیر کی دعوت بھی دی ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -