اقوام متحدہ کی مصالحتی پیشکش پر شکر گزار ہیں : پاکستان

اقوام متحدہ کی مصالحتی پیشکش پر شکر گزار ہیں : پاکستان

  

نیویارک (این این آئی)پلوامہ واقعے کے بعد کشیدگی کے پیش نظر پاکستان نے اقوام متحدہ میں سفارتی کوششیں تیز کردیں۔اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے یو این سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیریس اور سلامتی کونسل کے صدر سے ملاقاتیں کیں اور انہیں بھارت کی دھمکیوں اور وزیراعظم پاکستان کے مؤقف سے آگاہ کیا۔ملیحہ لودھی نے اقوام متحدہ کی توجہ مقبوضہ کشمیر میں جاری غاصبانہ کاروائیوں کی جانب دلائی اور مطالبہ کیا کہ وہ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی کم کرانے کیلئے اقوام متحدہ کو کردار ادا کرنا چاہیے۔ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ پلوامہ واقعہ کو مقبوضہ کشمیر کی صورتحال لے تناظر میں دیکھا جائے ،تمام مسائل کے حل کیلئے بھارت سے بات چیت کیلئے تیار ہیں،بھارت نے اور خطرہ پیدا کرنے کی کوشش کی تو پاکستان جواب کیلئے تیار ہے۔ ملیحہ لودھی نے کہا کہ بھارتی جارحانہ رویہ خطے کو مزید غیر مستحکم کررہا ہے، ضرورت پڑی تو پاکستان بھارتی اشتعال انگیزی کا بھرپور جواب دے گا۔پاکستانی مستقل مندوب نے مزید کہا کہ مسئلہ کشمیر پرامن طور پر حل ہونا چاہیے، بات چیت کے ذریعے مسئلہ حل کیا جاسکتا، مطمئن ہوں کہ اقوام متحدہ میں اس معاملے پر ایک انڈراسٹینڈنگ ہے۔

پاکستان ،اقوام متحدہ

اسلام آباد (آن لائن)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کا پاکستان بھارت میں مصالحتی کردار ادا کرنے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پوری دنیا جانتی ہے کہ ہندوستان میں انتخابات کے موقع پر پاک بھارت تعلقات میں جان بوجھ کر تناؤ پیدا کیا جاتا ہے ۔آج ہندوستان میں عوام ، صحافی ، شوبز سٹارز سوالات اٹھا رہے ہیں کہ پلوامہ واقعہ ایک بہت بڑا سکیورٹی فیلوئرہے ۔ان خیالات کا اظہار شاہ محمود قریشی نے نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ اور سیکرٹری جنرل نے میرے خط کا مثبت جواب دیا اور پاکستان بھارت کے درمیان مصالحت کی پیشکش پر ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں ۔اب ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ جس طرح بلاوجہ ہندوستان ماحول میں تناؤ پیدا کر رہا ہے اس کو مثبت طریقے سے ہینڈل کیا جائے ۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم عمران خان نے جو پالیسی بیان دیا وہ بڑا جامع اور فہم و فراست سے بھرپور ہے اب مزید ماحول میں تناؤ پیدا کرنے کا جواز تو نہیں رہتا لیکن پھر بھی جواز بنایا گیا تو ہم متحد ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ وقت گزرنے کیساتھ ساتھ ہندوستان کی اصلیت سامنے آتی جا رہی ہے اور اب ہندوستان کی عوام ، صحافی اور شوبز اسٹارز سوالات کر رہے ہیں کہ الیکشن کے دنوں میں پاکستان کے ساتھ تناؤ کی صورت حال کیوں پیدا ہو جاتی ہے حالانکہ بھارت میں اینٹی پاکستان مفروضہ تو بگتا ہے لیکن اس مرتبہ سکیورٹی الرٹ پر بھی بات کی جا رہی ہے کہ یہ ایک بہت بڑا سکیورٹی فیلئر ہے ۔ جس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی سکیورٹی کی قلعی کھول دی ہے ۔ آج اپوزیشن بھی بی جے پی کی پالیسیوں پر سوال اٹھا رہی ہے ۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ چین کے موقف پر ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں چین پاکستان کا دیرینہ دوست ہے اور انہوں نے ہمیشہ باوقار طریقے سے فیصلے کئے ہیں۔

شاہ محمودقریشی

مزید :

صفحہ اول -