موسمیاتی تبدیلی کے فصلوں پر گہرے اثرات مرتب ہو رہے ہیں، احمد سعید بھٹی

موسمیاتی تبدیلی کے فصلوں پر گہرے اثرات مرتب ہو رہے ہیں، احمد سعید بھٹی

  

لاہور(خصوصی رپورٹ)ماہر زرعی سائنسدان احمد سعید بھٹی نے اپنے بیان میں کہا کہ پوری دنیا میں اس وقت موسمیاتی تبدیلی کے فصلوں پرگہرے اثرات مرتب ہو رہے ہیں،براعظم ایشیا میں موسمیاتی تبدیلی کے فصلوں پر اثرات دوسرے براعظموں سے مختلف ہیں،پاکستان کے کاشتکار بھی موسمیاتی تبدیلی کے فصلوں پر اثرات سے شدید متاثر ہو رہے ہیں،پچھلی کئی دہائیوں سے ہمارے ملک کے کاشتکار اپنی فصلوں کی کاشت, برداشت اوردیکھ بھال ایک مخصوص موسمی حالات کے مطابق اپنارہے تھے، اب موسمی تغیر کی وجہ سے بے موسمی بارشیں اور پہاڑوں پر برفباری اور میدانی علاقوں میں گرم موسم کے اثرات نے ہمارے کاشتکاروں کو شدید پریشانی میں مبتلا کر دیا ہے،بدقسمتی سے ہمارے ملک میں مستقبل کی منصوبہ بندی نہ ہونے کی وجہ سے کاشتکاروں کو موسمیاتی تبدیلی کے متعلق کوئی آگاہی نہیں دی گئی اور نہ ہی ہمارے سرکاری ادارے اس سلسلے میں کوئی خاطر خواہ کوشش کر رہے ہیں. اٹھارویں ترمیم کے بعد زراعت کے متعلقہ تمام امور صوبائی حکومتوں کو ٹرانسفر ہو چکے ہیں اور موسمیاتی تبدیلی کی وزارت صرف وفاقی حکومت کے پاس ہے،موسمیاتی تبدیلی کی وفاقی وزارت کا صوبوں کے زراعت کے محکموں کے ساتھ کسی قسم کا رابطہ نہ ہونے کے برابر ہے اسی طرح ملکی سطح پر ہونے والی موسمیاتی تبدیلی کے متعلق معلومات صوبوں کے کاشتکاروں کے پاس پہنچانے کیلئے کوئی آگاہی پروگرام نہیں ہے اور نہ ہی ہمارے زرعی سائنسدانوں نے اس سلسلہ میں کوئی خاطر خواہ کام کیا ہے،پچھلے کئی سالوں میں موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے کچھ سیمینار ہوتے رہے ہیں لیکن نچلی سطح یعنی ضلع اور تحصیل کی سطح پر کسی قسم کی کوئی آگاہی نہیں ہے،حکومت کو چاہئیے کہ فوری طور پر موسمیاتی تبدیلی کی وفاقی وزارت کو صوبوں کے ساتھ مل کر کاشتکاروں کی آگاہی کے لیے ایک جامع پروگرام مرتب کرے تاکہ ملک کے کاشتکار موسم کی بدلتی ہوئی صورتحال سے بروقت آگاہ ہو سکیں اور اپنی فصل کی مناسب دیکھ بھال کر سکیں،گزشتہ دنوں وزیر اعظم پاکستان عمران خان صاحب نے اپنے ٹوئٹ میں موجودہ موسمی حالات کو ملک کے لیے اچھا شگون قرار دیا تھا. اس میں کوئی شک نہیں کہ موجودہ بارشیں ملک میں فصلوں پر اچھے اثرات مرتب کریں گی اور برف باری ملک کے پانی کے مسائل حل کرنے میں مدد گار ثابت ہو گی لیکن حکومت کو چاہیے کہ موسمی تغیر کی وجہ سے جہاں فصلوں کی پیداوار بڑھنے کے امکانات ہوتے ہیں وہاں ان کی مناسب خریداری کا بندوبست بھی کرے تاکہ زائد پیداوار ہونے کی وجہ سے پیدا شدہ جنس کی قیمتیں گر جاتی ہیں اور کاشتکار کا نقصان ہوتا ہے اس لیے حکومت کو چاہیے کہ اس کی خریداری کا مناسب انتظام کرے تاکہ چھوٹے کاشتکاروں کو نقصان سے بچایا جا سکے۔

احمد سعید بھٹی

مزید :

صفحہ آخر -